اتوار , 15 دسمبر 2019

پھانسی کی سزا سے جہاد فی سبیل اللہ تک / خفیہ دستاویز

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک ) سوشل میڈیا پر ایک خفیہ دستاویز شائع کی گئی ہے۔یہ دستاویز سعودی وزارت داخلہ کے خفیہ ادارے کی طرف سے سعودی شاہی محل کو بھیجی گئی تھی جس میں کہا گیا ہے کہ کچھ قیدیوں سے معاہدہ ہوا ہے کہ ان کی پھانسی کی سزا معاف اور ان کے گھر والوں کو ماہانہ تنخواہ کے بدلے میں وہ شام میں جہاد کرینگے، اور فی الحال یہ لوگ قتل اور منشیات میں ملوث ہونے کی وجہ سے جیل میں ہیں۔

اس لسٹ میں 254 سعودی، 82 اردنی، 105 یمنی، 21 فلسطینی اور 44 کویتی کے نام ذکر کیے گئے ہیں، اس دستاویز کے ساتھ ”سعودیہ کی دہشتگردوں کی حمایت“ والی دستاویزات میں مزید اضافہ ہو گیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

فوجی اڈےپرحملہ: امریکانےطالبان سے مذاکرات روک دیئے

افغانستان میں امریکی فوجی اڈے بگرام کے قریب طالبان کے حملے کے جواب میں امریکا …