جمعرات , 14 دسمبر 2017

آل سعود اور قطر کے ذریعے جعلی اسلام کی نشر و اشاعت

برلن(مانیٹرنگ ڈیسک)”ملتِ جوانِ فرانس” نامی ویبلاگ کے سربراہ نے "افقِ نو” کے چوتھے سیمینار میں کہا کہ کچھ لوگ اس بات کا ارمان لئے ہوئے ہیں کہ آل سعود اور قطر کے ذریعہ جعلی اور خود ساختہ اسلام کی نشر و اشاعت کر سکیں۔

"ملتِ جوانِ فرانس” ویبلاگ کے سربراہ "ایوان بندیتی” نے "افقِ نو” کے چوتھے سیمینار میں بات کرتے ہوئے کہا کہ آج یورپ صیہونیوں کی سواری کے گھوڑے کی مانند ہو گیا ہے، ہم مغرب میں خاندانی زندگی کی بربادی کا مشاہدہ کر رہے ہیں، خاندانی طرز معیشت کا شیرازہ بکھیرنے والے قوانین جیسے اسقاط حمل، سب اسی مہم کا حصہ ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ لوگ ان مسائل میں گرفتار ہیں جو ایک عالمی اور بین الاقوامی مشکل ہے۔ ان فرسودہ باتوں کے حامی اپنے نظریات دیگر اقوام پر لاگو کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کمیونسٹ انقلاب کی ناکامی کے بعد وہ مہاجرتی لہر کے ذریعے آبادی کا تناسب بگاڑنے کی فراق میں ہیں، وہ پرانی اقدار کے حامل معاشرے میں اپنے افراد کو کثیر تعداد میں داخل کرنا چاہتے ہیں۔

ایوان بندیتی کا مزید کہنا تھا کہ وہ اپنے جعل کردہ اسلام کو سعودی عرب اور قطر کے ذریعہ پھیلانا چاہتے ہیں جبکہ یہ اقدام ہمارے مذہبی اقدار کو پائمال کرنے کے لئے ہیں۔

انہوں نے تاکید کی کہ ان تمام سازشوں کے پس پردہ صیہوںی آئیڈیالوجی کارفرما ہے۔ یہ افراد یورپ میں موجود تاریخِی اور تہذیب و تمدن کے حامل معاشرے کو نابود کرنے کے در پے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

اسپین: میڈریڈ میں درجنوں شہریوں کا ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف احتجاج

میڈرڈ (مانیٹرنگ ڈیسک) اسپین کے درجنوں شہریوں نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے ...