ہفتہ , 16 دسمبر 2017

اسرائیل اور سعودی عرب کے مشترکہ تعاون کا معاہدہ

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکی صدر کے عنقریب سعودیہ اور اسرائیل کے دورے کے موقع پر امریکہ میں سعودی سفیر «فیصل بن خالد بن سلطان» نے اپنے اسرائیلی ہم منصب اور امریکی وزیر دفاع «رابرٹ اوورک» کے ساتھ معاشی اور فوجی تعاون کے بڑھانے اور «مشرق وسطیٰ اور ریڈ سی» میں قیام امن کے لئے درکار ضروری اقدامات پر بات چیت کرنے کے عنوان سے مشترکہ اجلاس ترتیب دیا ہے۔

اس اجلاس کے دوران اسرائیل اور فلسطین کے مسائل کے حل کے لئے ڈونلڈ ٹرمپ کا دو ملکی راہ حل بھی زیر بحث رہے گا۔

خیال رہے کہ اس اجلاس کے دوران 49 سال تک سعودیہ اور اسرائیل کے درمیان تیران اور صنافیر جزیروں کے استحصال اور باہمی فوجی تعاون پر مشتمل ڈرافٹ معاہدہ بھی موضوع بحث رہے گا جو ڈونلڈ ٹرمپ کے سعودیہ کے سفر پر فائنل ہوجائے گا۔

یہ بھی دیکھیں

ایران پر امریکہ کے تازہ الزامات بیت المقدس سے عالمی توجہ ہٹانے کی غرض سے ہیں:یمن

یمن کی اسلامی تنظیم انصار اللہ کے اعلی اہلکار کا کہنا ہے کہ ایران کے ...