منگل , 22 اکتوبر 2019

قطری بادشاہ کا ایرانی صدر روحانی کو ٹیلی فون

دوہا (مانیٹرنگ ڈیسک) ہمارے تعلقات گہرے اور مضبوط اور ٹھوس ہیں، مذاکرات اور مکالمہ ہی مسائل کے حل کا بہترین راستہ ہے۔ خلیج تعاون کونسل کی نمایندگی کرتے ہوئے کویت نے مذاکرات کے جن پیرامیٹرز کو طے کرنے کی ابتدا کی ہے اسے جاری رہنا چاہیے۔

‘‘ایرانی صدر روحانی نے قطری بادشاہ سے کہا کہ ’’ایران اپنے ہمسائیہ ممالک خاص کر بردار ملک قطر سے تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہے اور بھائیوں کے درمیان تعلقات میں حائل رکاوٹوں کو دور کیا جا سکتا ہے۔

‘‘قطری بادشاہ کا کہنا تھا کہ اس نے قطرکے ایگزیکٹو ممبران کو حکم دیا ہے کہ طرفین میں تعلقات کی مزید بہتری کے لئے کوششوں کو مزید تیز کریں۔

یہ فون قطر کیخلاف خلیجی ممالک کی محاذ آرئی کے بعد سامنے آیا ہے اگرچہ قطر اور ایران کے تعلقات اور طرفین میں رابطہ موجود تھا قطر کے پاس موجودہ بحران سے نکلنے کے لئے منجملہ تین بنیادی آپشنز میں سے ایک آپشن یہی ہے کہ وہ مزاحمتی بلاک کی سرپرستی میں چلا جائے بظاہر لگتا ہے کہ اس نے اسی آپشن کو ترجیح دی ہے کیونکہ باقی دو آپشن اس کے لئے سنگین نوعیت کی قیمت کے متقاضی تھے کیونکہ سعودی اماراتی مطالبات ماننا قطر کے لئے موت سے کم نہیں جبکہ امریکہ اس وقت مکمل بے رخی میں ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ترک اور کرد کا ایک دوسرے پر جنگ بندی کی خلاف ورزی کا الزام

انقرہ: شمالی شام میں 5 روزہ جنگ بندی کے اعلان کے باوجود فریقین کی جانب …