منگل , 22 اکتوبر 2019

ہر قسم کے حکومتی خطروں سے مقابلہ کرنے کیلئے آمادہ ہیں اور اب آل خلیفہ سے انتقام کا وقت آنے والا ہے، بحرینی علماء

منامہ: (مانیٹرنگ ڈیسک) بحرینی علما نے کہا ہے کہ وہ کسی بھی قسم کے حکومتی خطروں سے مقابلہ کرنے کیلئے آمادہ ہیں اور اب آل خلیفہ سے انتقام کا وقت آنے والا ہے۔

تفصیلات کے مطابق علماء کی جانب سے جاری کردہ بیان میں بحرینی علماء نے اعلان کیا ہے کہ بحرین میں آل خلیفہ کے وحشیانہ جرائم جو امریکی سرپرستی اور عالمی برادری کی خاموشی میں پیش آ رہے ہیں، ہمارے ارادوں اور عزائم میں استقامت پیدا کر رہے ہیں۔

علماء نے آل خلیفہ کی جابر حکومت کو مخاطب کر کے کہا گیا ہے کہ خدا کی مدد سے آل خلیفہ سے انتقام کا دن آنے والا ہے اور ان مظالم کے بارے میں تمہیں جوابدہ ہونا ہو گا۔

اللولوہ ٹی وی کے مطابق بحرین کے علماء نے آل خلیفہ کی جانب سے کسی بھی قسم کے خطرات سے مقابلہ کرنے کیلئے آمادگی کا اظہار بھی کیا ہے۔ بحرینی علما نے شہدا کے غسل و کفن اور تدفین کو ان کے ورثا کا حق قرار دیتے ہوئے تاکید کی کہ اس حق پر کسی بھی قسم کا تجاوز حرام، خدا اور مقدس دین کے ساتھ خیانت میں شمار ہوتا ہے۔

آل خلیفہ کے آلہ کاروں نے گزشتہ دنوں الدراز علاقہ میں شیخ عیسی قاسم کے مکان کے نزدیک مظاہرین پر حملہ کرتے ہوئے پانچ بے گناہ شہریوں کو شہید کر دیا تھا۔ آل خلیفہ کے آلہ کاروں نے دھرنا دینے والے نہتے عوام پر آنسو گیس اور پیلٹ گنز کی گولیاں چلائیں۔

حملہ آوروں نے مظاہرین کی ایک بڑی تعداد کو شیخ عیسٰی قاسم کے مکان سے گرفتار کر لیا۔ آل خلیفہ کے خلاف بڑھتے ہوئے غم و غصہ کے ساتھ ساتھ بحرین کے علما نے ملک کی عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ الدراز کے دردناک واقعے پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے احتجاج جاری رکھتے ہوئے سڑکوں پر رہیں۔

یہ بھی دیکھیں

ترک اور کرد کا ایک دوسرے پر جنگ بندی کی خلاف ورزی کا الزام

انقرہ: شمالی شام میں 5 روزہ جنگ بندی کے اعلان کے باوجود فریقین کی جانب …