ہفتہ , 24 اگست 2019

قطر اور سعودیہ کی کشیدگی کے دوران، سعودی ولیعہد کو برکنار کرنے کی سازش بے نقاب

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک)سعودی شاہی خاندان کے اندر محمد بن نائف کے خلاف ایک بغاوت شروع ہوگئی ہے جس میں ان کے جانشین محمد بن سلمان، حکومت کے ایک قدم مزید نزدیک ہو جائینگے۔

«النجم الثاقب» سائٹ نے کہا ہے کہ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ محمد بن نائف کو ہٹانے کے لیے تمام اقدامات انجام دیے جا چکے ہیں، تاکہ محمد بن سلمان ولی عہد بن سکے اور «محمد العریفی» اور «عائض القرنی» کو مفتی بنانا اس بات کی دلیل ہے۔

ان مفتیوں نے اپنے پیج پر کچھ تصویریں لگائی ہیں جس میں محمد بن سلمان بادشاہ کے دائیں اور محمد بن نائف بائیں جانب کھڑے ہیں۔

قطر کے مسئلے کے دو دن بعد القرنی نے کہا ہے "اے خدا تم ہمارے بادشاہ، ولیعہد اور اس کے جانشین کو کامیاب کر، اور ہمارے ملک کو مشکلات سے بچا ”

کہا جا رہا ہے کہ کچھ دن میں محمد بن نائف پر قطر کی طرف داری کا الزام لگایا جائے گا اور ان کو ولیعہدی سے برطرف کر دیا جائے گا۔

سیاسی مبصرین کا کہنا ہے کہ کچھ دن میں ہزاروں ٹیوٹر پیغامات میں یہ الزامات لگائے جائینگے جس کا بھرپور فائدہ ان کے رقیب یعنی محمد بن سلمان کو ہوگا۔

یہ بھی دیکھیں

ٹرمپ نے فلسطینی نژاد رکن کانگرس پر’سام دشمنی’ کا الزام تھوپ دیا

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے فلسطینی نژاد رکن کانگرس اور ڈٰیموکریٹک پارٹی کی …