منگل , 7 جولائی 2020

غرب اردن ، یہودی مذہبی تہوار کی آڑ میں علاقے میں اسرائیلی فوج تعینات، راستے سیل

e4d06c30-1bf6-43b8-8eb2-be1d3f5b0030_16x9_600x338

رملہ(مانیٹرنگ ڈیسک) یہودیوں کے مذہبی تہوار کی آمد کی آڑ میں صہیونی فوج نے مقبوضہ مغربی کنارے کے شہروں اور قصبوں کی فوج کی بھاری نفرتی تعینات کرتے ہوئے تمام شہروں کو لانے والے راستے سیل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔رپورٹ کے مطابق یہودیوں کے تہوار کی آڑ میں غرب اردن کوفوجی چھاؤنی میں تبدیل کردیا گیا ہےجبکہ مزید فوجی نفری بھی پہنچائی جائے گی۔ اس دوران مقبوضہ بیت المقدس اور سنہ 1948 ء کے علاقوں کو غرب اردن سے ملانے والی تمام گذرگاہوں سوائے قلقیلیہ کی ’’ایال‘‘ گذرگاہ کے آئندہ جمعرات تک بند رکھا جائے گا۔خیال رہے کہ صہیونی فوج کی جانب سے غرب اردن کے اہم مقامات کو بند کرنے اور فوجی نفری بڑھانے کا یہ پہلا واقعہ نہیں۔ آئے روز نام نہاد مذہبی تہواروں کی آڑ میں کبھی بیت المقدس کو سیل کردیا جاتا ہے اور کبھی غرب اردن کو فوجی چھاؤنی میں تبدیل کرنے غیراعلانیہ کرفیو لگا دیا جاتا ہے۔

 

یہ بھی دیکھیں

اسرائیلی فورسز کی مغربی کنارے میں فائرنگ، ایک فلسطینی شہید

یروشلم: اسرائیل کی پولیس نے مغربی کنارے میں ایک فلسطینی کو افسر کو کار تلے …