جمعرات , 12 دسمبر 2019

ترکی، داعش سے تعلق کے شبہہ میں 10 افراد گرفتار، خودکش جیکٹ برآمد

turkish-police-reuters759

استنبول (مانیٹرنگ ڈیسک)ترکی میں سکیورٹی فورسز نے شام کی سرحد پر شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ سے تعلق رکھنے والے دس مشتبہہ شدت پسندوں کو گرفتار کیا ہے۔اطلاعات کے مطابق جن افراد کو گرفتار کیا گیا ہے اس میں سے ایک خود کش دھماکے والی بیلٹ بھی پہنے ہوئے تھا۔یہ گرفتاریاں استنبول شہر میں تین روز قبل بم دھماکے کے بعد کی گئی ہیں جس میں چار افراد ہلاک ہوئے تھے۔ مقامی خبر رساں ایجنسی نے ایک فوجی ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ مشتبہ افراد کو جنوبی ریاست غزیانتیپ سے اس وقت گرفتار کیا گیا جب وہ سرحد پار کرکے ترکی میں داخل ہونے کی کوشش کر رہے تھے۔میڈیا رپورٹ کے مطابق جس گروپ کو حراست میں لیا گیا ہے اس میں ایک شخص نے دھماکہ خیز مواد سے لوڈ ایک جیکیٹ پہن رکھی تھی جو کسی بھی وقت دھماکے کے لیے تیار تھی۔ ان افراد کی جو تصاویر شائع کی ہیں اس میں انہیں اپنے سر کے پیچھے بندھے ہاتھوں میں دیکھا جا سکتا ہے اور اس میں ایک دھماکہ خیز بیلٹ بھی ہے۔ پولیس گذشتہ دنوں استنبول میں ہونے والے بم دھماکے کے سلسلے میں بعض مشتبہ افراد کی تلاش میں ہے اور اسی تلاشی مہم کے دوران ان افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔استنبول میں ہونے والے دھماکے میں چار غیرملکی بشمول ایرانی اور اسرائیلی ہلاک ہوئے تھے جبکہ 39 افراد زخمی میں ہوئے تھے۔ استنبول میں ہونے والے اس حملے کی ذمہ داری کسی بھی گروپ نے قبول نہیں کی ہے تاہم حکومت کا کہنا ہے جس مقامی گروپ نے یہ دھماکہ کیا تھا اس کا تعلق دولت اسلامیہ سے ہے۔

یہ بھی دیکھیں

یمن سے سوڈانی فوج واپس بلانے کے فیصلے کا خیرمقدم

صنعا: یمن کی اعلی انقلابی کمیٹی کے سربراہ محمد علی الحوثی نے یمن سے فوج …