جمعہ , 29 مئی 2020

صیہونی حکومت کے ہاتھوں فلسطینیوں کا قتل جنیوا کنونشن کی کھلی خلاف ورزی ہے، زہرا ارشادی

4bk1db1de9d10b2sil_800C450

جینوا (مانیٹرنگ ڈیسک)صیہونی حکومت کے ہاتھوں فلسطینیوں کا قتل ، ان کی بنیادی تنصیبات اور گھروں کو تباہ و برباد کرنا، بین الاقوامی انسان دوستانہ قوانین، انسانی حقوق کے قوانین، اقوام متحدہ کی قراردادوں اور جنیوا کنونشن کی کھلی خلاف ورزی ہے۔ ان خیالات کا اظہار اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل میں ایران کی نمائندہ زہرا ارشادی نے صیہونی حکومت کے وحشیانہ اقدامات کی مذمت کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مقبوضہ سرزمینوں میں انسانی حقوق کی صورتحال” کے جائزے کے اجلاس میں، عالمی برادری سے اسرائیل کے خلاف موثر قدم اٹھائے جانے کا مطالبہ کیا۔ زہرا ارشادی نے اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے کے ساتھ اسرائیلی حکومت کے عدم تعاون پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ صیہونی حکومت نے مقبوضہ فلسطین کی ابتر صورتحال کے خاتمے کے لئے انجام پانے والی تمام بین الاقوامی کوششوں کا مذاق اڑایا ہے۔ انہوں نے انسانیت سوز اقدامات انجام دینے والے اسرائیلی حکام کے خلاف عالمی عدالت میں مقدمہ چلائے جانے کے لئے،عالمی برادری سے اجتماعی طور پر قدم اٹھانے کا مطالبہ کیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

فلسطین کا بڑا اعلان، امریکہ اور اسرائیل کے ساتھ تمام معاہدے منسوخ

فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ محمود عباس نے امریکہ اور صیہونی حکومت کے ساتھ طے پانے …