جمعرات , 18 جولائی 2019

پابندیاں ہٹنے کے بعد ایران بھارت اقتصادی تعلقات میں غیر معمولی توسیع کا امکان

ایران،بھارت مشترکہ اقتصادی تعاون کونسل کے قیام اور کارکردگی کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہا کہ یہ کونسل دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں غیرمعمولی توسیع لانے کے لئے بھرپور کوشش کرے گی.

11

بھارت، ایران کی اقتصادی تعاون کونسل کے سربراہ نے کہا ہے کہ عالمی پابندیوں کے خاتمے کے بعد اسلامی جمہوریہ ایران اور بھارت کے درمیان غیرمعمولی تعلقات کی توسیع کے لئے اچھا وقت ہے جس سے دونوں ممالک کو فائدہ اٹھانا چاہئے.

ان خیالات کا اظہار ‘کی.ایل ملہوترا’ نے ارنا کے نمائندے کو خصوصی انٹریو دیتے ہوئے کیا. اس موقع پر انہوں نے کہا کہ جوہری معاہدے کے حوالے سے جائنٹ ایکشن پلان کے مکمل نفاذ اور ایران مخالف عالمی پابندیوں کے خاتمے کے بعد تہران اور نئی دہلی کے تعلقات کی توسیع کے راستے میں موجود رکاوٹوں اور مسائل کا بھی خاتمہ ہوجائے گا.

ایران،بھارت مشترکہ اقتصادی تعاون کونسل کے قیام اور کارکردگی کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہا کہ یہ کونسل دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں غیرمعمولی توسیع لانے کے لئے بھرپور کوشش کرے گی.

کی.ایل. ملہوترا نے کہا کہ عالمی پابندیوں کے خاتمے سے اسلامی جمہوریہ ایران کی سیاسی اور اقتصادی پوزیشن مزید مستحکم ہوگی.

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کو پرامن جوہری ٹیکنالوجی استعمال کرنے کا حق حاصل ہے تاہم مغربی ممالک سازشوں کے ذریعے ایران سے یہ حق چھینا چاہتے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

طالبان نے وردک میں درجنوں طبی مراکز بند کرادیئے

افغانستان میں غیرملکی این جی او کےتحت چلنے والے درجنوں طبی مراکز طالبان نے بند …