پیر , 1 مارچ 2021

اسلامی جمہوریہ ایران میں آج یوم فطرت منایا جا رہا ہے

4bk4fec4509a0a5ikv_800C450

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک) ایران میں قدیم زمانے سے نوروز کے تیرہویں دن کو یوم فطرت کا نام دیا گیا ہے اور ایرانی عوام ہر سال یوم فطرت مناتے چلے آرہے ہیں۔ اس روایت کے تحت ایرانی عوام اپنے گھر والوں اور بال بچوں کے ساتھ صبح سے شام تک سرسبز و شاداب وادیوں، پارکوں اور قدرتی مناظر کے درمیان رہتے ہیں۔ اس موقع پر تہران سمیت ایران بھر کے تمام شہروں کے پارکوں، تفریحی مقامات اور قدرتی وادیوں میں لوگ اپنے اپنے بال بچوں اور گھر بھر کے افراد کے ساتھ پکنک مناتے ہیں-بچے اور نوجوان پارکوں اور باغات میں کھیلتے کودتے دکھائی دیتے ہیں جبکہ بڑے بوڑھے حضرات قالین اور دریاں بچھائے ماضی کے قصے ایک دوسرے سے بیان کر کے لطف اندوز ہوتے ہیں۔ اس موقع پر لوگ طرح طرح کے کھانے تیار کرتے ہیں اور پارکوں، باغات اور قدرتی وادیوں میں دسترخوان بچھا کر ان نعمتوں سے لطف اندوز ہوتے ہیں اور سرسبز و شادابی اور بہار کی آمد کو خداوند متعال کی ایک نعمت قرار دیتے ہوئے اس کی قدردانی کرتے ہیں۔نوروز کے معنی نیا دن جو کہ شمسی سال کا پہلا دن بھی ہے اور عیسوی حساب سے اکیس مارچ کے دن کو ایرانی عوام اور ساتھ ہی فارسی زبان ممالک کے عوام جش کے طور پر مناتے ہیں۔ حقیقت میں یہ دن اہل مشرق کے لئے بہار کی آمد پرمسرت اور شادمانی کا اظہار ہے۔ ہزاروں برسوں سے جاری یہ جشن اور تہوار موسم سرما کے خاتمے اور بہار کے موسم کی نوید لے کر آتا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

پچیس ذیقعدہ کا دن نزول رحمت اور فرش زمین بچھنے کا دن ہے

حضرت امام رضا علیہ السلام جب خراسان کے سفرکے دوران 25 ذیقعدہ کو مرو پہنچے …