جمعرات , 23 نومبر 2017

امریکی بمباری سے افغان شہریوں کی ہلاکت نا قابل قبول ہے: اقوام متحدہ

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) اقوام متحدہ نے افغانستان میں امریکی بمباری کے نتیجے میں دو درجن سے زائد عام شہریوں کی ہلاکت کو ناقابل قبول قرار دیدیا۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے نمائندہ خصوصی برائے افغانستان ٹاڈا مشی یاماموٹو نے کہا ہے کہ افغانستان میں گزشتہ ہفتے ہرات اور لوگر میں امریکی اتحادی طیاروں کی بمباری میں خواتین اور بچوں سمیت 28 افراد ہلاک اور 16 زخمی ہوئے ۔

ٹاڈا مشی یاماموٹو نے عام شہریوں کے جانی نقصان پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے تحقیقات شروع کرنے کا اعلان کیا اور کہا کہ جنگ میں عام شہریوں کا جانی نقصان ناقابل قبول ہے ۔ دوسری جانب آسٹریلیا نے بھی افغانستان میں اپنے فوجیوں کے جنگی جرائم کی تحقیقات شروع کرنے کا اعلان کر دیا ہے ۔

غیر ملکی میڈیا نے جولائی میں خبر دی تھی کہ آسٹریلوی فوج نے افغانستان میں ایک بچے کے بہیمانہ قتل اور خفیہ آپریشنز سے متعلق سیکڑوں صفحات پر مشتمل دستاویزات کو چھپایا ۔ آسٹریلوی دفاعی افواج کے انسپکٹر جنرل نے 2005 سے لے کر 2016 تک افغانستان میں آسٹریلوی فوج کے جنگی جرائم کی تحقیقات شروع کرنے کا اعلان کر دیا ہے ۔

یہ بھی دیکھیں

بھارتی پولیس کا مسلمان خاتون سے انسانیت سوز سلوک

بھارتی پولیس نے ہزاروں لوگوں کے سامنے مسلمان خاتون کا برقعہ ات… بھارتی پولیس نے ...