بدھ , 22 نومبر 2017

’پاکستان اور چین سے دوطرفہ جنگ کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا‘بھارت

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی آرمی چیف جنرل بِپن روات کا کہنا ہے کہ پاکستان اور چین سے دوطرفہ جنگ کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔انہوں نے اس افسانے کو بھی رد کردیا کہ ’جمہوریت پسند یا جوہری ہتھیاروں سے لیس پڑوسی ممالک ایک دوسرے سے جنگ نہیں کرتے‘۔

بھارتی اخبار ’انڈیا ٹوڈے‘ کی رپورٹ کے مطابق نئی دہلی میں ایک سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے جنرل بپن روات نے دعویٰ کیا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان اختلافات ختم نہیں ہوسکتے۔

انہوں نے مستقبل میں بھارتی و چینی فوجی دستوں کے آمنے سامنے کی صورت میں ملک کی فوجی حکمت عملی سے متعلق بھی مختصر بات کی۔بھارتی آرمی چیف نے زور دیتے ہوئے کہا کہ صورتحال کی تکرار جیسے کہ ڈوکلام میں بھارتی اور چینی افواج کے درمیان پیش آنے والا حالیہ تنازع جیسی صورتحال مستقبل میں بھی پیش آسکتی ہے۔

جنرل بپن روات نے الزام لگایا کہ چین خطے میں اپنا اثر و رسوخ بڑھا رہا ہے اور بھارت سے ڈوکلام کا علاقہ زبردستی حاصل کرنا چاہتا ہے، اس لیے ہمیں تیار رہنا چاہیے۔

ان کا کہنا تھا کہ ’اگر بھارتی افواج شمالی سرحد پر چین کے سامنے کھڑی رہی تو اس بات کے امکانات موجود ہیں کہ پاکستان صورتحال کا فائدہ اٹھانے کی کوشش کرے گا، اس لیے ہمیں شمالی اور مغربی بارڈرز پر کشیدگی کے لیے تیار رہنا چاہیے۔‘انہوں نے کہا کہ ’فوجیں تنہا جنگ نہیں لڑتیں بلکہ پوری قوم جنگ لڑتی ہے اور ہمیں اس کے مطابق خود کو تیار کرنا چاہیے۔‘

یہ بھی دیکھیں

شام میں قیام امن کے بارے میں ایران ، روس اور ترکی کے فوجی سربراہان کی ملاقات اور گفتگو

ترک فوج کے چیف آف اسٹاف کے دفتر کی طرف سے جاری ہونے والے بیان ...