بدھ , 22 نومبر 2017

بھارتی وزیرداخلہ کی سری نگر آمد پر حریت قیادت نظر بند

سری نگر (مانیٹرنگ ڈیسک ) بھارتی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کی سری نگر آمد کے موقع پر حریت قیادت کی جانب سے دی گئی کال پر وادی بھر میں شٹر ڈاؤن ہڑتال کی جارہی ہے جب کہ کٹھ پتلی حکومت نے حریت رہنماؤں کو نظر بند کردیا۔

ذرائع کے مطابق حریت رہنما سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق اور یاسین ملک کی جانب سے بھارتی وزیر داخلہ کی سری نگر آمد کی موقع پر مشترکہ طور پر شٹر ڈاؤن ہڑتال کی کال دی گئی۔حریت قیادت کی کال پر وادی بھر میں تجارتی سرگرمیاں مکمل طور پر معطل جب کہ سری نگر سمیت وادی بھر میں سڑکوں پر ٹریفک بھی نہ ہونے کے برابر ہے۔

حریت رہنماؤں کے مشترکہ بیان میں کہا گیا ہے کہ کشمیری عوام ہڑتال کو کامیاب بنا کر دنیا کو پیغام دیں کہ فوجی طاقت اور عوام کو ہراساں کرنے سے آزادی کی تحریک کو دبایا نہیں جاسکتا۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق سینئر حریت رہنما سید علی گیلانی کو گھر میں نظربند کردیا گیا ہے جب کہ میرواعظ عمر فاروق کو جمعے کی رات ہی نظر بند کیا گیا۔بھارتی قابض انتظامیہ نے جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کے سربراہ یاسین ملک کو سری نگر کی سینٹرل جیل میں نظر بند کر رکھا ہے۔

خیال رہے کہ بھارتی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ چار روزہ دورے پر گزشتہ روز سری نگر پہنچے ہیں اور اس موقع پر فوج کی اضافی نفری تعینات ہے جب کہ ریلوے حکام نے بارہ مولا اور بنی ہال کے درمیان چلنے والی ٹرین سروس بھی معطل کر دی۔

یہ بھی دیکھیں

شام میں قیام امن کے بارے میں ایران ، روس اور ترکی کے فوجی سربراہان کی ملاقات اور گفتگو

ترک فوج کے چیف آف اسٹاف کے دفتر کی طرف سے جاری ہونے والے بیان ...