منگل , 21 نومبر 2017

مغرب کے دوہرے معیارات

(مسعودابدالی صاحب)

توہین رسالت کی آزادی اوربے لباس شہزادی کی پردہ پوشی: فرانس کی ایک عدالت نے پیرس کے رسالے کلوزر Closer کو حکم دیا ہے کہ وہ برطانیہ کی شہزادی کیتھرین ولیم اور انکے شوہر کو ایک لاکھ یورو یا 119144ڈالر ادا کرے۔ اسکے علاوہ اخبار کے ایڈیٹر اور چیف ایگزیکیوٹیو پر 53500 ڈالر جرمانہ بھی عائدکیا گیا ہے۔ یہ قصہ ستمبر 2012 کا ہے جب فرانس میں طنزو مزاح اور کارٹون کے اس رسالےنے برطانوی شہزادی کیتھریں ولیم کی نیم عریاں تصاویر چھاپ دیں۔ تصاویر کی اشاعت کے ساتھ ہی برطانیہ کے شاہی خاندان نے اسکے خلاف فرانسیسی عدالت میں اپیل دائر کردی۔ عدالتی کارروائی کے دوران رسالے کی انتظامیہ نے موقف اختیار کیا کہ یہ کیمرے سے کھینچی ہوئی تصویریں ہیں اور محل کے باہر سے لی گئی ہیں۔شہزادی صاحبہ کھلے عام بے لباسی کا مظاہرہ فرمارہی تھیں لہٰذا رسالے کے قارئین بھی اس منظر کو دیکھنے کا حق رکھتے ہیں اور پابندی سے اظہار رائے کا حق مجروح ہوگا۔

لیکن عدالت نے دودن کی سرسری سماعت کے بعد فیصلہ دیا کہ ان تصاویر کی اشاعت سے برطانوی شاہی خاندان کی ناموس مجروح ہوئی ہے۔عدالت نے رسالے پر 2600ڈالر جرمانہ کرتے ہوئے کہا اگر مزید تصویر شائع ہوئی تو ڈیڑھ لاکھ ڈالر جرمانہ کیا جائیگا۔ فیصلے پر تبصرہ کرتے ہوئے فرانس کے ایڈووکیٹ جنرل نے کہا تھاکہ حالیہ فیصلے کی روشنی میں فرانس کی وزارت انصاف برطانیہ کے شاہی خاندان کی توہین پر رسالے کے خلاف فوجداری مقدمہ بنانے پر غور کررہی ہے۔ اتفاق سے شہزادی صاحبہ کی یہ تصاویر آئرلینڈ کے ایک اخبار آئرش اسٹار نے بھی شائع کردی جسکی پاداش میں اخبار کے ایڈیٹر کو فوری طور پر معطل کردیا گیا۔ انٹرنیٹ پر خرید و فروخت کے سب سے بڑے ادارے eBay نے اپنےکسی بھی لنک پر کلوزر، شائی اور آئرش اسٹار کے اس شمارے کو اپ لوڈ کرنے پر پابندی لگادی تھی۔آج اس مقدمے کا تفصیلی فیصلہ سنادیا گیا جسکی تفصیلی ہم نے اوپر درج کی ہے۔

آپ کو یاد ہوگا پیرس ہی کے ایک رسالے چارلی ہیبڈو نے توہین آمیز کارٹون شائع کئے تھےجسکے خلاف مسلمانوں نے عدالت کا دروازہ کھٹکھٹایا تو سابق صدر فرانکو ہولیندے نے عدالت میں پیش ہوکر رسالے کا دفاع کیا اور کہاکہ مذہبی جذبات کے نام پر اظہار رائے کو محدود نہیں کیا جاسکتا۔ عدالت نے مسلمانوں کی درخواست مسترد کردی اور فیصلہ سنایا کہ فرانس کا آئین اظہار رائے پرکسی قسم کی پابندی کی اجازت نہیں دیتا اور مسلمانوں کو بھی اس دستور کا احترام کرنا چاہئے۔ اس پس منظر میں فرانسیسی عدلیہ کے حالیہ فیصلےکو کیا نام دیا جائے؟

یہ بھی دیکھیں

ابوبکر البغدادی کہاں ہوسکتا ہے؟ بعض فرضیے اور امکانات

(تسنیم خیالی) عراق اور شام میں دہشت گرد تنظیم داعش کا خاتمہ قریب ہو چکا ...