پیر , 25 ستمبر 2017

نائن الیون حادثے میں سعودیہ کی نا اہلی ثابت ، امریکی سینیٹر کے سنسنی خیزانکشافات

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک)THE REALNEWS NETWORK نے حال ہی میں سابق امریکی سینیٹر باب ابراہام کا ایک انٹرویو شائع کیا ہے جس میں نائن الیون حادثے کے حقائق کو مخفی رکھنے کے حوالے سے بش اور ڈک چینی کی حکومت کے کردار کو واضح کیا گیا ہے۔

امریکہ میں اس وقت کے سعودی سفیر کو نائن الیون حادثے کی مکمل خبر تھی اور حادثے سے چند دنوں پہلے انہوں نے بش سے کئی بار ملاقاتیں کی تھیں۔ جب کہ ان ملاقاتوں کو مکمل طور پر خفیہ رکھا گیا تھا۔ اس حادثے کے تعلق سے سعودی اور امریکی حکومتوں نے مکمل طور پر لاتعلقی اور لاعلمی کا اظہار کیا تھا۔

حکومت کے تمام اداروں نے ایک ساتھ اس حادثے کے پہلؤوں کو مخفی رکھنے کی کوشش کی ہے۔ اورلینڈو ایئرپورٹ کی سکیورٹی سے لیکر (کہ جنہوں نے سعودی شہریوں کی امریکہ آمد سے انکار کیا) امریکی حکومت کی جانب سے سعودی شہریوں کو حادثے کے فوراً بعد ملک چھوڑنے کی اجازت دینے تک تمام اطلاعات کو خفیہ رکھا گیا۔

انہوں نے واضح طور پر کہا کہ نائن الیون حادثے کے بعد امریکی حکومت نے سب کو دھوکا دیتے ہوئے پورے سنیریو کو نئے سرے سے لکھا تاکہ سعودی عرب کے کردار کو مکمل طور پر ختم کردیا جائے۔

یہ بھی دیکھیں

بھارت جنوبی ایشیا میں دہشت گردی کی ماں ہے:پاکستان

بھارت جنوبی ایشیا میں دہشت گردی کی ماں ہے، ملحیہ لودھی کا جنرل اسمبلی میں ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے