جمعہ , 26 فروری 2021

امریکہ، مقیم مسلمانوں کیساتھ توہین آمیز سلوک جاری، 5 رکنی مسلم خاندان کو جہاز سے اُتار لیا گیا

american-airlines-ceo-doug-parker-industry-has-learned-painful-lessons-from-past

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکا میں مسلمانوں کے ساتھ توہین آمیز سلوک کا سلسلہ جاری ہے اور ایک پانچ رکنی مسلم خاندان کو اس کے ظاہری اسلامی حلیے کی بنا پر جہاز سے اتار دیا گیا۔ذرائع کے مطابق امریکہ کی یونائیٹڈ ایئر لائن کے کپتان نے شیکاگو سے واشنگٹن جانے والی پرواز میں سوار تین بچوں کی ماں ایمان ام سعد شبلی،ان کے شوہر اور تین بچوں کو اڑان بھرنے قبل جہاز سے اتر جانے کا حکم دیا۔کپتان نے ایمان ام سعد شبلی کے استفسار پر بہانہ تراشی سے کام لیتے ہوئے کسی تفصیل کے بغیر سیکورٹی معاملات کو اس اقدام کی وجہ قرار دیا۔امریکا اسلام ریلیشن کونسل نے مذکورہ مسلم خاندان کی جانب سے یونائیٹڈ ایئر لائن کے حکام کو ایک خط ارسال کیا ہے جس میں اس واقعے میں ملوث ملازمین کے خلاف قانونی کارروائی کا مطالبہ کیا گیا ہے۔امریکہ اسلام ریلیشن کونسل کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر احمد رحاب نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ مسلمانوں کے خلاف اس طرح کا توہین آمیز اور نسل پرستانہ رویہ کسی طور قابل قبول نہیں ہے۔امریکہ میں مسلمانوں کے خلاف توہین آمیز سلوک کے واقعات میں حالیہ مہینوں کے دوران قابل ذکر حد تک اضافہ ہوا ہے۔دوسری جانب ام ایمان شبلی نے اپنے فیس بک اکاؤنٹ پر اس واقعے کے خلاف زبردست احتجاج کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ہمیں فلائٹ سیکورٹی ایشوز کی بنیاد پر واشنگٹن جانے والی پرواز سے باہر نکال دیا گیا جہاں ہم بچوں کی موسم بہار کی چھٹیاں گزارنے جا رہے تھے۔انہوں نے لکھا ہے کہ میرے تینوں بچے اس بھیانک تجربے کا سامنا کرنے کے سلسلے میں ابھی بہت چھوٹے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

شام پر حملہ کرنے والے اسرائیلی میزائل تباہ

شامی فوج نے صوبہ حماہ کی فضا میں اسرائیل کے میزائلی حملوں کو ناکام بنا …