جمعرات , 25 فروری 2021

11سالہ بچے کی ذہانت ، مایہ ناز سائنسدان آئن اسٹائن اوراسٹیفن کو پیچھے چھوڑ دیا

480718-aininstineyearboy-1459183744-257-640x480

نیویارک (مانیٹرنگ رپورٹ)البرٹ آئن اسٹائن اور اسٹیفن ہاکنگ کو ذہین ترین سائنس داں تسلیم کیا جاتا ہے۔ آئن اسٹائن نے انقلابی ایجادات کی بدولت دائمی شہرت پائی۔ اسٹیفن ہاکنگ نظریاتی طبیعیات پر عبور رکھتے ہیں۔ کائنات کے مختلف پہلوؤں سے متعلق نظریات پیش کرنے پر جسمانی معذوری کا شکار سائنس داں کو عالمگیر شہرت حاصل ہوئی۔ایک شخص کتنا ذہین ہے، اس کا فیصلہ اس کے آئی کیو لیول سے ہوتا ہے۔ ذہانت کے اس پیمانے کے مطابق آئن اسٹائن اور اسٹیفن ہاکنگ یکساں طور پر ذہین ہیں۔ دونوں کا آئی کیو اسکور 160 ہے۔ تاہم ذہانت کی دوڑ میں اس گیارہ سالہ لڑکے نے مایہ ناز سائنس دانوں کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ایک عام بالغ فرد کا آئی کیو اوسطاً 100 ہوتا ہے۔ 140 آئی کیو کے حامل فرد کو ذہین تصور کیا جاتا ہے۔ اس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ آئن اسٹائن غیرمعمولی ذہین تھے، اور اسٹیفن ہاکنگ بھی ذہانت میں انھی کے ہم پلّہ ہیں۔ لیکن گیارہ سالہ کِم ہیمرنے آئی کیو ٹیسٹ میں 162پوائنٹس حاصل کیے ہیں۔ اس طرح وہ ان شہرۂ آفاق سائنس دانوں سے ذہانت میں دو ’ قدم‘ آگے ہے۔مینسا ذہانت پرکھنے کے لیے جو ٹیسٹ لیتی ہے وہ Cattell III B کہلاتا ہے۔ ڈیڑھ سو سوالات پر مشتمل اس ٹیسٹ میں بالغ فرد زیادہ سے زیادہ 161 اور نابالغ 162 نمبرحاصل کرسکتا ہے۔ یوں کیان نے اس ٹیسٹ میں پورے نمبر حاصل کرکے خود کو آئن اسٹائن اور اسٹیفن ہاکنگ سے زیادہ ذہین ثابت کیا۔دنیا میں ایسے لوگ موجود ہیں جن کا آئی کیو 162 سے بھی زیادہ ہے مگر انھوں نے سائنس کے میدان کا انتخاب نہیں کیا۔ غالباً یہی وجہ ہے کہ وہ ان سائنس دانوں جیسی شہرت حاصل نہیں کرپائے۔ سائنسی مضامین سے کیان کو بھی دل چسپی نہیں۔ سائنسی فارمولوں میں سَر کھپانے کے بجائے وہ بڑا ہوکر پیشہ وَر فٹبالر بننا چاہتا ہے۔اس بارے میں ننھے’ آئن اسٹائن‘ کا کہنا ہے،’’ آئی کیو ٹیسٹ میں اتنا اچھا اسکور حاصل کرنے اور مینسا کا رُکن بن جانے پر میں بے حد خوش ہوں۔ کئی لوگ مجھے آئن اسٹائن کی طرح سائنس داں بننے کا مشورہ دے رہے ہیں مگر میں فٹبالر بننا چاہتا ہوں۔ مجھے اس کھیل سے عشق ہے۔‘‘کیان کے والد، رِچ ہیمر آگ بجھانے کے محکمے میں ملازم ہیں۔ دل چسپ بات یہ ہے کہ وہ اپنے بیٹے کو ذہین خیال نہیں کرتے۔ رچ کے مطابق ان کا بیٹا چالاک ضرور ہے مگر وہ اسے جینیئس تسلیم نہیں کرتے، لیکن آئی کیو ٹیسٹ میں کیان کی شان دار کارکردگی پر وہ فخر ضرور محسوس کررہے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

لاک ڈاؤن سے پریشان ہیں تو اپنی چیخ آئس لینڈ تک پہنچائیں!

آئس لینڈ سیاحوں کے لیے اپنی تشہیر کرتا رہتا ہے اور اب اسی مہم کے …