بدھ , 13 دسمبر 2017

شمالی کوریا کے 47 لاکھ شہری فوج میں بھرتی کیلئے تیار

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)بین الاقوامی ایٹمی توانائی ایجنسی کے سربراہ نے کہا ہے کہ شمالی کوریا نے ایٹمی پروگرام میں انتہائی تیزی سے

پیشرفت کی ہے، پیانگ یانگ کے خلاف محاذکی تیاری کے لیے امریکی صدر 5ایشیائی ممالک کادورہ کریں گے۔

امریکی حملے کاخدشہ بڑھتے ہی شمالی کوریا میں لاکھوں افراد نے خود کو فوج میں بھرتی کیلیے پیش کر دیا ہے۔برطانوی میڈیاکے مطابق شمالی کوریا کے47لاکھ شہریوں نے خود کو فوج میں بھرتی کے لیے پیش کیا ہے۔اڑھائی کروڑکی آبادی کے حامل شمالی کوریا کی فوج 12لاکھ اہلکاروں پر مشتمل ہے اور چین، بھارت اور امریکہ کے بعد تعداد کے لحاظ سے اس کی فوج دنیا میں چوتھے نمبر پر ہے۔

بین الاقوامی ایٹمی توانائی ایجنسی کے سربراہ یوکیا امانو نے جنوبی کوریا کے وزیر خارجہ سے سیئول میں ملاقات کی۔ امانو کا کہنا تھا شمالی کوریا کا ایٹمی پروگرام عالمی سطح پر خطرہ ہے۔ شمالی کوریاکے معاملے پر عالمی برادری کو متحد ہونا چاہیے۔شمالی کوریا کے خلاف محاذ بنانے کے لیے امریکہ کے صدر ڈونلڈٹرمپ نومبر میں جاپان، جنوبی کوریا، چین، ویتنام اور فلپائن کا دورہ کریں گے۔

وائٹ ہائوس کا کہنا ہے اس دورے سے جزیرہ نما کوریا کو ایٹمی ہتھیاروں سے پاک کرنے میں مدد ملے گی۔ادھر شمالی کوریا پر دبائو بڑھانے کیلئے امریکی وزیرخارجہ ٹیلرسن نے چین کے اعلیٰ سفارتکاروں‘ وزیر خارجہ سے ملاقات کی۔ ٹرمپ کے مجوزہ دورے پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ طیارے میں فنی خرابی کے سبب تاخیر سے پہنچے۔

امریکی وزیر خارجہ ایکس ٹیلرسن نے کہا ہے کہ شمالی کوریا بات چیت پر آمادہ ہو تو امریکہ نے راستے کھول دیئے ہیں۔ پیانگ یانگ کے ساتھ رابطے میں ہیں۔ شمالی کوریا سے رابطوں کے چینل کو استعمال کیا جارہا ہے۔ شمالی کوریاآمادہ ہو تو بات چیت کرسکتے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

یورپی یونین نے بھی امریکی صدر کے فیصلے کو ماننے سے انکار کردیا

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی صدر کے بیت المقدس کو اسرائیلی دارلحکومت تسلیم کرنے کے یکطرفہ ...