پیر , 1 مارچ 2021

کراچی، کالعدم سپاہ صحابہ کی مرکزی مسجد صدیق اکبر سے فائرنگ، پولیس اہلکار سمیت کمسن بچی جا ں بحق

karachi

کراچی (نامہ نگار) اطلاعات کے مطابق ناگن چورنگی پر واقع کالعدم دہشتگرد تنظیم اہلسنت و الجماعت کی مرکزی مسجد صدیق اکبر سے فائرنگ کے نتیجے میں دو پولیس اہلکار سمیت ایک کمن بچی اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھی، یہ پہلا واقعہ نہیں اس سے قبل بھی ناگن چورنگی پر واقع اس مسجد ضرار سے کئی بار پولیس اہلکاروں اور عام شہریوں پر فائرنگ کی جاچکی ہے۔واضح رہے کہ حکومت اور اسٹیبلشمنٹ کی جانب سے اس کالعدم دہشتگرد تنظیم سپاہ صحابہ کے کئی رہنما ئوں اور کارکنوں کو رہا کردیا گیا ہے جسکے بعد کراچی سمیت ملک بھر میں ایک بار پھر میں بدامنی پھیلنے کا خطرہ ہے، یہ گرفتار دہشتگرد شیعہ افراد کے ٹارگٹ کلنگ سمیت مختلف قسم کی دہشتگردی کے واقعات میں ملوث رہے ہیں تاہم مفاہمتی آرڈینس دیکر انہیں کس لئے رہا کیا جارہا ہے اسکا جواب وزیر داخلہ صاحب دیں؟

یہ بھی دیکھیں

فلسطین کی آزادی اور اسرائیل کا خاتمہ، پاکستانی قوم کی خواہش

حماس کے رہنما اسمٰعیل ہنیہ نے کہا ہے کہ پاکستان نے ہمیشہ فلسطین کی حمایت …