بدھ , 13 دسمبر 2017

اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان ہتھیاروں کے سودے کا انکشاف

یروشلم (مانیٹرنگ ڈیسک) صیہونی حکومت کے ایک اخبار نے اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان ہتھیاروں کے سودے ہونے کا انکشاف کیا ہے۔ذرائع کے مطابق اسرائیل کے اخبار معاریف نے ہفتے کے روز لکھا ہے کہ متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان فوجی تعاون اور ہتھیاروں کے سودے ہوتے رہے ہیں۔

اس رپورٹ کے مطابق معروف اسرائیلی تاجر میتائی کوکہافی نے، جو متحدہ عرب امارات کے تاجروں کے ساتھ ہتھیاروں کے معاملات میں تعاون کرتا رہا ہے، ہتھیاروں کے سودوں کے لئے چارٹر طیارے سے صیہونی فوج کے بعض جنرلوں اور صیہونی عہدیداروں کو ابوظہبی بھیجا ہے۔

اس صیہونی اخبار کے مطابق اسرائیل، فوجی و سیکورٹی کے شعبوں میں مصر کے ساتھ بھی تعاون کرتا رہا ہے اور جلد ہی یونان و قبرص کی شمولیت سے فضائیہ کی مشترکہ مشقیں بھی انجام پانے والی ہیں۔

واضح رہے کہ گذشتہ چند ماہ کے دوران علاقے کے بعض عرب ملکوں کے سربراہ صیہونی حکومت کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کی کوشش کرتے رہے ہیں۔بحرین کی حکومت نے بھی عرب ملکوں کی جانب سے اسرائیل کا بائیکاٹ ختم اور اس کے ساتھ تعلقات قائم کئے جانے کی بات کہی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایرانی پارلیمنٹ کے نمائندوں کا اسلامی ممالک سے اسرائيل سے سفارتی تعلقات ختم کرنے کا مطالبہ

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک) اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے 235 نمائندوں نے اسلامی ممالک سے ...