منگل , 17 اکتوبر 2017

آئی ایم ایف نے پاکستانی معیشت کے اعشاریوں کا اندازہ 2022 تک پیش کردیا

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک) عالمی مالیاتی ادارے آئی ایم ایف کے پاکستانی معیشت پر نئے اندازے سامنے آگئے جس کے مطابق معاشی نمو بہتر اورمہنگائی میں اضافہ کم رہے گا جب کہ جاری خسارہ 35 فیصد زائد رہیگا۔ آئی ایم ایف نے پاکستانی معیشت کے اعشاریوں کا اندازہ 2022 تک پیش کیا ہے اور اس سے پہلے رواں سال اپریل میں یہ اعداد جاری کیے گئے تھے۔

عالمی ادارے کے مطابق 2017 کے اختتام پر ملکی معاشی نمو 5.27 فیصد رہے گی، معاشی نمو بڑھے گی مگر مہنگائی نہیں۔ اپریل میں معاشی نمو 5 فیصد رہنے کا اندازہ لگایا گیا تھا۔عالمی ادارے کے مطابق مہنگائی میں اضافے کی شرح 2017 میں 4.15 فیصد رہے گی جو اپریل کے مقابلے میں 0.15 فیصد کم ہے۔

عالمی ادارے نے 2017 میں جاری خسارہ 465 ارب رہنے کے اندازے لگائے ہیں، اپریل میں جاری خسارہ 344 ارب رہنے کے اندازے لگائے گئے تھے۔یہ تخمینہ اپریل کے مقابلے میں 35 فیصد زائد ہے اور ماہرین کے مطابق یہ تخمینہ اس لیے زیادہ ہے کہ سی پیک منصوبے کی درآمدات بہت زیادہ ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

اسٹاک مارکیٹ:منفی رجحان کے ساتھ کاروباری ہفتے کا اختتام

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان اسٹاک ایکسچینج (پی ایس ایکس) میں کاروباری ہفتے کا اختتام منفی ...