بدھ , 5 اگست 2020

شام ، داعشی دہشتگرد تاریخی آثارکو ترکی میں فروخت کررہے ہیں، ویٹالی چورکین

russia

جینوا (مانیٹرنگ ڈیسک) اقوام متحدہ میں روس کے نمائندے نے کہا ہے کہ داعش دہشت گرد شام کے تاریخی آثار کو ترکی کے شہر غازیانتپ میں فروخت کررہے ہیں۔تفصیلات کے مطابق اقوام متحدہ میں روس کے نمائندے ویٹالی چورکین نے کہا ہے کہ داعش دہشت گرد شام کے تاریخی آثار کو ترکی کے شہر غازیانتپ میں فروخت کررہے ہیں۔ چورکین نے اقوام متحدہ کے نام ایک خط میں لکھا ہے کہ داعش کے قبضہ میں ایک لاکھ شامی تاریخی آثار ہیں جن میں سے 9 یونیسکو میں درج شدہ ہیں۔ داعش دہشت گرد شام کے تاریخی آثار کو فروخت کرکے سالانہ 200 ملین ڈالر منافع حاصل کررہے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

ادلب میں جبھۃ النصرہ دہشتگرد گروہ کے اسلحے کے گودام پر بمباری

دمشق: العالم نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق شامی فوج کے جنگی طیاروں نے پیر …