بدھ , 22 مئی 2019

سعودی عرب نے یمن پر حملے میں امریکی بم استعمال کئے ، ہیومن رائٹس واچ

download (1)

صنعاء (مانیٹرنگ ڈیسک) ہیومن رائٹس واچ نے کہا ہے کہ سعودی عرب نے یمن کے صوبہ حجہ کے ایک بازار پر حملے میں امریکی بم استعمال کئے ہیں۔یاد رہے سعودی عرب نے گزشتہ پندرہ مارچ کو یمن کے صوبہ حجہ کے مستبا علاقے میں واقع بازار الخمیس پر ہوائی حملہ کیا تھا جس میں کم سے کم 97عام شہری شہید ہو گئے تھے جن میں 25بچے شامل تھے۔انسانی حقوق کی تنظیم ،ہیومن رائٹس واچ، نے اپنی تازہ رپورٹ میں کہا ہے کہ جائے وقوعہ سے امریکا میں بنے دو بموں کے ٹکڑے ملے ہیں۔اس حملے میں بڑی تعداد میں شہید ہونے والے عام شہریوں اور بچوں کی دردناک تصاویر کے منظر عام پر آنے کے بعد عالمی برادری میں غم و غصے کی لہر دوڑ گئی تھی اور اس جارحیت کی تحقیقات کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

yeman american wepons

قابل ذکر ہے کہ اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بان کی مون کے دفتر نے سولہ مارچ کو ایک بیان جاری کر کے کہا تھا کہ یہ واقعہ یمن کا مسئلہ پیدا ہونے کے بعد ایک مہلک ترین حملہ ہے۔یہ حملہ حالیہ دو ہفتوں کے دوران ہونے والا اپنی نوعیت کا دوسرا بڑا واقعہ ہے، فوجی علاقوں پر حملہ بین الاقوامی قوانین کی کھلی خلاف ورزی ہے۔واضح رہے 16مارچ کو ہی اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے بھی یمن کے مذکورہ بازار پر ہونے والے سعودی حملے کی مذمت کی تھی اور یمن کے عام شہریوں کے قتل عام کے بارے میں اقوام متحدہ اور دیگر بین الاقوامی اداروں کی تحقیقات کا مطالبہ کیا تھا۔قابل ذکر ہے کہ یمن پر سعودی عرب کے جارحانہ حملوں پر شدید بین الاقوامی رد عمل کے باوجود امریکی حکام نے اس سلسلے میں خاموشی اختیار کر رکھی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

امریکہ سعودی عرب کا دودھ دوہنے کے بعد سرکاٹ دے گا؛سربراہ عراقی تنظیم نجباء

بغداد(مانیٹرنگ ڈیسک)عراقی تنظیم نجباء کے سیاسی شعبہ کے سربراہ نے کہا ہے کہ امریکہ سعودی …