جمعرات , 23 نومبر 2017

بن زایدکا آل سعود خاندان کے متعدد افراد کو قتل کرنیکا منصوبہ تیار

(تسنیم خیالیؔ)
ٹوئیٹر پر سرگرم باغی سعودی شہزادہ فارس بن سعود نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اماراتی ولی عہد محمد بن زاید عملی طور پر سعودی عرب کے حکمران بن چکے ہیں اور سعودی ولی عہد محمد بن سلمان مکمل طور پر بن زاید کے ماتحت ہیں۔

فارس بن سعودی نے اپنی ایک ٹویٹ میں انکشاف کرتے ہیں کہ اماراتی ولی عہد بن زاید نے بن سلمان کے مخالفین کو قتل کرنے کا منصوبہ تیار کرلیا ہے اور منصوبے کے تحت بیرون ملک مقیم مخالفین سمیت اندرون ملک مخالفین کا بھی صفایا کیا جائیگا اور حکمران خاندان آل سعود کے اندر موجود مخالف شہزادے تو بن زایدکی ’’ہٹ لسٹ‘‘کے سرفہرست پر موجود ہیں۔ فارس بن سعود مزید انکشافات کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ محمد بن زاید نے اپنے قتل و غارت گری کے منصوبوں کیلئے 2ٹیمیں تشکیل دی ہیں۔

پہلی ٹیم کو (C4)کا کوڈ نیم دیا گیا ہے جو اندرون ملک مخالفین کو نشانہ بنائے گا جبکہ دوسری ٹیم کو (C6)کا کوڈ نیم دیا گیا ہے۔جس کی ذمہ داری بیرون ملک موجود مخالفین کا صفایا کرنا ہوگا۔

اپنے انکشافات جاری رکھتے ہوئے فارس بن سعودٹویٹ کرتے ہیں کہ دونوں گروپس میں مصر، افغانستان ، تہائی لينڈ ،روس ،کولومبیا اور افریقہ سے تعلق رکھنے والے کرائے کے قاتلوں کی خدمات حاصل کی گئی ہے۔جن تربیت کی ذمہ داری ’’بلیک واٹر‘‘کوسونپی گئی تھی۔

فارس بن سعود انکشاف کرتے ہیں کہ سعودی عرب میں موجود آل سعود خاندان کے شہزادے احمد بن عبدالعزیز (شاہ سلمان کے سگے بھائی )،مقرن بن عبدالعزیز (شاہ سلمان کے سوتیلے بھائی)،متعب بن عبداللہ (شاہ عبداللہ کے بیٹے)،سابق ولی عہد محمد بن نایف ،شاہ فہد کے بیٹے محمد ، عبدالعزیز اور منصور ،سلطان بن عبدالعزیز کے بیٹے بندر، خالد اور طلال بن عبدالعزیز کے بیٹے اور مشہور کاروباری شخصیت الولید بن طلال ، اماراتی ولی عہد کے ہٹ لسٹ پر موجود ہیں۔

فارس بن سعود مزید کہتے ہیں کہ بن زاید نے اپنے منصوبوں کے تحت آل سعود کے کچھ شہزادوں کی خدمات بھی حاصل کی ہیں جن کو کام ختم ہونے کے بعد قتل کردیا جائیگا۔

علاوہ ازیں فارس بن سعودی اپنی ایک اور ٹویٹ میں کہتے ہیں کہ بن زاید کے قتل و غارت گری کی لسٹ میں شاہ سلمان کے دوبیٹے،فیصل بن بندر بن عبدالعزیز سمیت شہزادہ سلطان بن العزیز ،شاہ عبداللہ ،شاہ فہد اور نایف بن العزیز کے متعدد بیٹے شامل ہیں (جنہیں سعودی عرب میں عام طور پر بڑے اور صف اول کے شہزادوں میں شمار کیا جاتا ہے)،آل سعود خاندان کے افراد کے علاوہ بن زاید کی لسٹ میں ایسی شخصیات بھی شامل ہیں جو سعودی عرب میں اہم عہدوں پر فائز ہیں۔آخر میں فارس بن سعود نے اپنی ایک ٹویٹ میں یہ بھی انکشا ف کیا کہ بن زاید کا یہ منصوبہ جلد شروع کردیا جائے گا۔

یہ بھی دیکھیں

الوداع‘ چین کو الوداع

(محمد اسلم خان….چوپال) ہزار سالہ تاریخ گواہ ہے چین کے کبھی جارحانہ اور توسیع پسندانہ ...