جمعرات , 25 فروری 2021

عرب دنیا کیلئے خطرے کی گھنٹی،مشرق وسطی میں امریکی جنگی طیارے بی 52ایس تعینات

B-52

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ نے سرد جنگ کے خاتمے کے 25سال بعد مشرق وسطیٰ میں ایک بار پھر اپنے خطرناک جنگی طیارے بی 52ایس تعینات کر دیئے ہیں۔ فوکس نیوز کی رپورٹ کے مطابق یہ طیارے شام اور عراق میں برسرپیکار شدت پسند تنظیم داعش کے ٹھکانوں کو نشانہ بنانے کے لیے قطر میں العدیدایئربیس پر تعینات کیے گئے ہیں۔امریکی ایئرفورس کی سنٹرل کمانڈ کے لیفٹیننٹ جنرل چارلس براؤن کا کہنا تھا کہ ”ان طیاروں کی تعیناتی سے اتحادی افواج کی داعش کے ٹھکانوں کو درست نشانہ بنانے کی صلاحیتوں میں اضافہ ہو گا۔ اس کے علاوہ ان طیاروں کو مشرق وسطیٰ میں دیگر جگہوں پر جہاں بھی ضرورت پڑی استعمال کیا جا سکتا ہے۔“اس سے قبل امریکی ایئرفورس کے بی 1جنگی طیارے شام اور عراق میں فضائی کارروائیاں کر رہے تھے لیکن انہیں فروری میں نگہداشت(Maintenance) کی غرض سے واپس امریکہ بھیج دیا گیا تھا۔ رپورٹ کے مطابق امریکی وزیرخارجہ جان کیری نے گزشتہ روز اپنے دورہئ بغداد کے دوران داعش کے خلاف دباؤ مزید بڑھانے کے عزم کا اعادہ کیا تھا۔ اس وقت امریکی فوجی حکام کی طرف سے بیان سامنے آیا تھا کہ ان طیاروں کے واپس جانے سے داعش کے خلاف جنگ پر کوئی فرق نہیں پڑے گا۔

یہ بھی دیکھیں

شہید قاسم سلیمانی کے قتل کا جواب امریکہ کو دینا ہو گا: ایران

مجید تخت روانچی نے ایران اور امریکہ کے مابین قیدیوں کے تبادلے کے سوال پر …