پیر , 19 اگست 2019

بھارتی نژاد برطانوی وزیر کے خفیہ دورہ اسرائیل پر تنازع

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی اخبارات کے مطابق ہندوستانی نژاد ایک برطانوی وزیر اور رکن پارلیمنٹ پریتی پٹیل نےوزارت خارجہ کےعلم میں لائے بغیر اسرائیل کا خفیہ دورہ کیا تھا۔ ان کے اس خفیہ دورہ اسرائیل پر برطانوی سیاسی اور حکومتی حلقوں میں ایک نیا تنازع پیدا ہوا ہے

بھار کے کثیرالاشاعت اردو اخبار ’اعتماد‘ نے بتایا ہے کہ پریتی پٹیل نے اسرائیل کا خفیہ دورہ رواں سال جون میں کیا۔ ان کے اس دورے کا برطانوی وزارت خارجہ کو علم نہیں۔

رپورٹ کے مطابق مسز پٹیل نے اپنے خفیہ دورہ اسرائیل کے دوران اسرائیلی سیاسی رہ نما اور رکن کنیسٹ [پارلیمنٹ] یائیر لبید سے بھی ملاقات کی تھی۔ اس کے علاوہ انہوں نے اسرائیل کے کئی سرکاری اداروں کا بھی وزٹ کیا۔ ان کے اس دورے میں ’کنزرویٹیو فرینڈز آف اسرائیل‘ نامی گروپ کےاعزازی صدر اور صہیونی ریاست نواز برطانوی لیڈر نے بھی اسرائیل کا دورہ کیا۔ تل ابیب میں ایک اعلیٰ سطحی ملاقات برطانیہ میں تعینات اسرائیلی سفیر کے ایماء پر کرائی گئی تھی۔ پٹیل کے اس دورے کے بارے میں اسرائیل میں متعین سفیر یا سفارت خانے کو مطلع نہیں کیا گیا۔

برطانیہ کے بعض سیاسی رہ نماؤں نے الزام عاید کیا ہے کہ پریتی پٹیل اسرائیل نواز گروپوں کے ساتھ میل جول بڑھا کر اسرائیل کے حامی متمول لوگوں سے فنڈز حاصل کرنا چاہتی ہیں تاکہ مستقبل میں برطانیہ میں اپنے سیاسی مشن کو زیادہ موثر طریقے سے آگے بڑھایا جاسکے۔ ان پر اسرائیل کے حوالے سے آزادانہ خارجہ پالیسی کی راہ ہموار کرنے کا بھی الزام ہے۔ بھارتی نژاد پریتی پٹی عرصے سے صہیونی ریاست کی کھلے بندوں حمایت کرتی چلی آئی ہیں۔ برطانوی کابینہ میں شامل وزراء نے پریتی پٹیل کے راز داری میں دورہ اسرائیل پر تنقید کرتے ہوئے اسے کابینہ کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی قرار دیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

وزیر ریلوے شیخ رشید احمد کو لندن میں انڈے؛انڈے برسانے والا شخص فرار

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک)وزیر ریلوے شیخ رشید احمدکو لندن میں انڈے مارے گئے،ان پر انڈے برسانے …