جمعرات , 23 نومبر 2017

صیہونیزم خود بڑی تباہی ہے:بشارالجعفری

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک) اقوام متحدہ میں شام کے مستقل مندوب کا کہنا ہے کہ صیہونستی فکر خود بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے والے اسلحے کی مانند اور علاقے میں تشدد اور جنگوں کی وجہ ہے۔

شام کی سرکاری خبر رساں ایجنسی، سانا کے مطابق اقوام متحدہ میں شام کے مستقل مندوب بشار الجعفری نے اقوام متحدہ کے ایک اجلاس میں کہا ہے کہ اسرائیل کا بین الاقوامی جوہری توانائی کی ایجنسی کے ساتھ تعاون نہ کرنا اور ان کی ایجنسی کی جانب سے مشرق وسطیٰ کو جوہری اسلحے سے پاک کرنے کی درخواست پر بے اعتنائی برتنا، علاقے کے امن کے لیے خطرے کی علامت ہے۔

بشار الجعفعری نے اس بات پر زور دیا کہ مغرب نے اسرائیل کو ایٹمی ٹیکنالوجی سے لیس کیا اور صیہونی حکومت کے ایٹمی اسلحے کی پردہ پوشی کرتے ہوئے عالمی برادری کی توجہ کا رخ غیر اہم مسائل کی طرف پھیر دی۔ان کا کہنا تھا کہ شام میں تمام دہشتگرد گروہوں کو اسرائیل کی حمایت حاصل ہے جن میں جبہہ النصرہ سر فہرست ہے۔

یہ بھی دیکھیں

شام میں قیام امن کے بارے میں ایران ، روس اور ترکی کے فوجی سربراہان کی ملاقات اور گفتگو

ترک فوج کے چیف آف اسٹاف کے دفتر کی طرف سے جاری ہونے والے بیان ...