بدھ , 13 دسمبر 2017

سانحہ ماڈل ٹاؤن کے لواحقین کو تصدیق شدہ رپورٹ مل گئی

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان عوامی تحریک کے درجنوں کارکنوں نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ کے لیے سول سیکریٹریٹ کے سامنے احتجاج کیا۔سانحہ ماڈل ٹاؤن کے لواحقین اور پاکستان عوامی تحریک کے کارکنوں نے جوڈیشل رپورٹ کے حصول کے لیے لاہور میں سول سیکریٹریٹ کے سامنے احتجاج کیا۔ اس دوران حکومت کے خلاف اور جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ کے حصول کے لیے نعرے بازی بھی کی گئی۔دوسری جانب انتظامیہ نے سول سیکرٹریٹ کے داخلی دروازے عام شہریوں کے لیے بند کر دیے جب کہ کسی بھی ناخوش گوار واقعے سے نمٹنے کے لیے پولیس کی بھاری نفری بھی تعینات تھی۔

احتجاج کے کچھ دیر بعد پاکستان عوامی تحریک کے مرکزی رہنما خرم نواز گنڈا پور نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ کل ہم نے سیکریٹری داخلہ کو رپورٹ کی درخواست دی تھی، اسپیشل سیکریٹری نے ہمیں رپورٹ دے دی ہے، اس رپورٹ کے ایک ایک صفحے پر مہر اور دستخط موجود ہے، ہمارامقصد رپورٹ کا حصول تھا جو پورا ہوگیا، اس لیے اب کارکنوں کو واپس لے جارہے ہیں تاہم ہم وزیر اعلیٰ پنجاب اور وزیر قانون کے استعفے کے مطالبے پر قائم ہیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز لاہور ہائی کورٹ کے فل بینچ نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ 3 روز میں لواحقین کے حوالے کرنے اور 30 روز میں پبلک کرنے کا حکم دیا تھا۔ فیصلے کی روشنی میں پنجاب حکومت نے رپورٹ جاری کردی تھی۔

یہ بھی دیکھیں

حدیبیہ کیس میں شاہ خاور اسپیشل پراسیکیوٹر نیب مقرر

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) حدیبیہ پیپر ملز کیس میں شاہ خاور ایڈووکیٹ کو اسپیشل پراسیکیوٹر نیب ...