بدھ , 13 دسمبر 2017

خلیج فارس تعاون کونسل کا سربراہی اجلاس ناکام

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک) خلیج فارس تعاون کونسل کا 38 واں سربراہی اجلاس کویت میں منعقد ہوا، جس میں سعودی عرب سمیت اہم ملکوں کے سربراہاں شریک نہیں ہوئے جس کے باعث دو روزہ اجلاس کو مختصر کردیا گیا۔

رائے الیوم کی رپورٹ کے مطابق خلیج فارس تعاون کونسل کا 38 واں سربراہی اجلاس کویت میں منعقد ہوا، جس میں سعودی عرب سمیت اہم ملکوں کے سربراہاں شریک نہیں ہوئے جس کے باعث دو روزہ اجلاس کو مختصر کردیا گیا۔چھ عرب ممالک پر مشتمل خلیج فارس تعاون کونسل کے سربراہی اجلاس کی صدارت امیر کویت شیخ صباح الاحمد الجابر الصباح نے کی۔

سعودی عرب کے امریکہ نواز شاہ سلمان بن عبدالعزیز سمیت بحرین، متحدہ عرب امارات اور سلطنت عمان کے سربراہان بھی اجلاس سے غائب رہے جن کی نمائندگی یا تو وزرائے خارجہ یا وزرائے اعظم کے نمائندوں نے کی۔ جبکہ قطر کے امیر شیخ تمیم بن حمد آل ثانی واحد سربراہ تھے جو اس سربراہی اجلاس میں شریک ہوئے تھے جس کے باعث اجلاس کا دورانیہ دو روز کے بجائے ایک روز تک کرنا پڑا۔

قطر بحران شروع ہونے کے بعد خلیج فارس تعاون کونسل کا یہ پہلا سربراہی اجلاس تھا۔ جس میں 6 میں سے 4 ممالک کے سربراہان غائب تھے۔

یہ بھی دیکھیں

ایرانی پارلیمنٹ کے نمائندوں کا اسلامی ممالک سے اسرائيل سے سفارتی تعلقات ختم کرنے کا مطالبہ

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک) اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے 235 نمائندوں نے اسلامی ممالک سے ...