منگل , 31 مارچ 2020

قدس کی آزادی کے لئے مسلمانوں کے درمیان اتحاد ضروری ہے،آیت الله نوری همدانی

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک) ایران کی معروف دینی درسگاہ کے استاد نے قدس کو عالم اسلام کا بنیادی مسئلہ اور غاصبوں کے ہاتھ سے قدس کی رہائی کے لئے مسلمانوں کے درمیان اتحاد کو ضروری امر قرار دیتے ہوئےفرمایا ہے کہ صیہونی غاصبین سے القدس کو آزاد کرانے کا واحد راستہ جہاد ہے ۔

استاد’’ حسین نوری همدانی‘‘ نے کہا کہ قرآن کریم میں یہودی قوم کی جتنی مذمت و شدید تنقید کی گئی ہے کسی قوم کی نہیں ہوئی ہے ۔

آپ نے وضاحت کرتے ہوئے فرمایا کہ قرآن کریم نے ان سب مسائل جیسے یہود کی مسلسل و برابر عہد شکنی ، الٰہی احکامات و آیات کو قبول نہ کرنا اور انکار کرنا ، پیغمبروں کو قتل کرنا اور ان کی قسی القلبی کی طرف اشارہ کیا ہے ۔

استاد’’ حسین نوری همدانی‘‘ نے تاکید کرتے ہوئے فرمایا کہ اگر مسلمانوں میں اتحاد ہوتا تو یہ غاصب حکومت نہ وجود میں آتی اور نہ اسوقت بہت سارے لوگوں کو بے گھر ہونا پڑتا اورنہ بچے و عورتوں کو شہید کیا جاتا اورنہ ہی القدس سامراجی حکومت کے مرکز میں تبدیل ہوتا ۔

آپ نے فرمایا کہ قدس اور مسجد اقصی تمام مسلمانوں سے متعلق ہے اور عالم اسلام کو چاہیئے کہ اتحاد کے ساتھ صیہونی حکومت کے مقابلہ میں کھڑے ہوں ۔موصوف عالم دین نے فرمایا کہ جب تک صیہونی حکومت خطے میں موجود ہے لوگوں کو سکون و آرام اور عزت و اطمینان حاصل نہیں ہوگا ۔

حضرت آیت الله نوری همدانی نے اپنی تقریر کے اختمامی مراحل میں فرمایا کہ اس وقت قدس شریف کا مسئلہ مسلمانوں کے لئے بنیادی مسئلہ ہے اور مسلمانوں کو چاہیئے کہ اپنے اتحاد کے ذریعہ اسلام سے متعلق قدس شریف کو صیہونیوں کے ہاتھ میں باقی رہنے کی اجازت نہ دیں اور اگر مسلمان عزت ، عظمت ، اور قدرت و طاقت چاہتے ہیں تو جہاد کے علاوہ اس کے حصول کے لئے کوئی راستہ نہیں ہے۔

یہ بھی دیکھیں

چینی حکومت انسانی ہمدردی کے اصولوں پر گامزن

پاکستان میں عراق کے دینی مرجع آیت اللہ شیخ محمد الیعقوبی کے نمائندے نے کہا …