جمعہ , 10 اپریل 2020

عالمی برادری کے پاس بشارالاسد سے مذاکرات کے علاوہ کوئی راستہ نہیں،فرانسیسی صدر

پیرس (مانیٹرنگ ڈیسک) فرانس کے صدر نے کہا ہے کہ فروری 2018 کے آخر تک داعش کے خلاف مکمل کامیابی حاصل ہو جائےگی اور اس صورت میں عالمی برادری کے پاس شامی صدر بشارالاسد سے مذاکرات کے علاوہ کوئی دوسرا راستہ نہیں ہے۔فرانس کے صدر ایمیوئل میکرون نے اعادہ کیا کہ فروری 2018 کے آخر تک شام میں داعش کے خلاف مکمل کامیابی حاصل ہو جائے گی۔

میکرون نے کہا کہ عراق کے وزیر اعظم حیدر العبادی نے 9 دسمبر کو داعش کے خلاف فتح کا اعلان کیا تھا لیکن وہ سمجھتے ہیں کہ فروری 2018 کے آخر میں داعش کے خلاف مکمل کامیابی حاصل ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ داعش کی مکمل نابودی کے بعد عالمی برادری کے پاس شام کے صدر بشارالاسد سے مذاکرات کے علاوہ کوئی دوسرا راستہ نہیں ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ بشارالاسد نے ایران اور روس کی مدد سے جنگ میں کامیابی حاصل کی ہے اور وہ اسی دلیل کی بنا پر اقتدار میں رہیں گے۔

یہ بھی دیکھیں

عراق، اب مصطفیٰ الکاظمی حکومت بنائیں گے

عدنان الزرفی عراقی حکومت کی کابینہ تشکیل دینے میں ناکام ہو گئے جس کے بعد …