پیر , 20 اگست 2018

بعض ممالک اپنے مفادات کے لیے القدس کو قربان کرنا چاہتے ہیں:اردگان

انقرہ (مانیٹرنگ ڈیسک) ترکی کے صدر نے امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کیطرف سے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دیے جانے کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ بعض ممالک یک طرفہ اقدامات اور عالمی قوانین کو بالائے طاق رکھتے ہوئے اپنی مخصوص مفادات کے لئے القدس کو قربان کرنا چاہتےہیں۔

ترک صدر ’’رجب طیب اردوگان‘‘نے اپنے ایک پیغام میں امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کیطرف سے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دیے جانے کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ بعض ممالک یک طرفہ اقدامات اور عالمی قوانین کو بالائے طاق رکھتے ہوئے اپنی مخصوص مفادات کے لئے القدس کو قربان کرنا چاہتےہیں۔

انہوں نے کہا کہ مقبوضہ بیت المقدس صدیوں سے امن وآشتی اور امن بقائے بائے کی علامت رہا ہے مگر ایک فریق اپنے مخصوص مفادات کے حصول کے لیے عالمی قوانین کو بالائے طاق رکھتے ہوئے القدس کو قربانی کا بکرا بنا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ القدس کے حوالے سے پورا عالم اسلام مشکل ترین دور سے گذر رہا ہےکیونکہ بیت المقدس کے تاریخی تشخص کو مٹانے کے لیے دشمن قوتوں نے حملےتیز کردیے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ امریکی صدر کی طرف سے القدس کو اسرائیل کا دار الحکومت تسلیم کرنے پر نہ صرف مسلمان بلکہ مسیحی برادری میں بھی غم وغصہ پایا جا رہا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ عالم اسلام کا حصہ ہونے کے ناطے ہم نے ہرسطح پر القدس کے دفاع کے لیے کوششیں کی ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

مسجد اقصیٰ میں اسرائیلی پولیس گردی اسرائیل کی مذہبی جارحیت ہے: اردن

عمان (مانیٹرنگ ڈیسک)اردن نے جمعہ کے روز اسرائیلی پولیس کی جانب سے مسجد اقصیٰ کو ...