جمعہ , 25 مئی 2018

ایران کا اسلامی انقلابی نظام استعمار کے منہ پر ایک طمانچہ ہے:امریکی پروفیسر

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی ریاست ٹیکساس کے ایک پروفیسر نے ایرانی اسلامی انقلاب کو نظام جبر و استحصال کے خلاف کاری ضرب قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایرانی انقلاب نے افریقہ میں مظالم کے شکار عوام کے لئے سنہری موقع فراہم کیا۔

ٹیکساس کی ہیوسٹن یونیورسٹی کے شعبہ تاریخ کے پروفیسر ’’گیرالڈ ہورن‘‘ نےایرانی ذرایع ابلاغ کے ساتھ انٹریو میں ایرانی اسلامی انقلاب کو نظام جبر و استحصال کے خلاف کاری ضرب قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایرانی انقلاب نے افریقہ میں مظالم کے شکار عوام کے لئے سنہری موقع فراہم کیا۔

اسلامی انقلاب کی 39ویں سالگرہ کی مناسبت سے انہوں نے کہا کہ ایران میں ظالم شاہ جو نظام جبر و استحصال کا حامی تھاکا تختہ اُلٹنے سے افریقہ میں مظلوم عوام کو جو مظالم کے خلاف مقاومت کررہے تھے ایک سنہری موقع حاصل ہوا۔

انہوں نے کہا کہ آج اقوام عالم ایران کے سابق آمر محمد رضا شاہ کے خلاف اسلامی انقلاب کی کامیابیوں کوقدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے کیونکہ شاہ ایران، جنوبی افریقہ میں نسلی امتیازی سلوک کا حامی اور نوآبادیاتی نظام کے خلاف تحریک کو ختم کرنے کی حمایت کرتا تھا۔امریکی پروفیسر نے کہا کہ ایران کا سابق شہنشاہ مشرق وسطی اور افریقی خطے میں بادشاہت اور آمرانہ نظام کی حمایت کرتا تھا۔

انہوں نے کہا کہ ایران میں اسلامی انقلاب کی فتح سے افریقی قوموں کے لئے مثبت فضا فراہم ہوگئی اور یہ انقلاب ان کی تحریکیوں کو دبانے کے امریکی اور صہیونی عزائم کی راہ میں سب سے رکاوٹ بن گیا۔

پروفیسر گیرالڈ ہورن جو 30 سے زائد کتب کے مصنف بھی ہیں نے کہا کہ ایران کے آمر خاندان پہلوی کو دوبارہ دنیا کی نظروں میں لانے کی پالیسی حیرت کن نہیں کیونکہ اس کا اصل مقصد ہی امریکہ کی جانب سے دنیا میں جبر اور آمرانہ نظام کی حمایت کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ کی نظر میں ایران میں امریکہ مخالف نظام کے بجائے سعودی عرب میں بادشاہت بہتر ہے کیونکہ یہاں امریکی مفادات کی تکمیل ہورہی ہے۔

امریکی پروفیسر نے شاہ ایران اور افریقہ میں نظام جبر کے ظالم حکمرانوں کے درمیان گٹھ جوڑ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ایران میں اسلامی انقلاب نے نظام جبر و استحصال کے خاتمے کے لئے اہم کردار ادا کیا۔

پروفیسر گیرالڈ ہورن نےمزید اسلامی جمہوریہ ایران کو خطے کا اہم ملک قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایرانی عوام نے شاہ کو باہر نکال کر دنیا پر بڑا احسان کیا کیونکہ شاہ ایران نہ صرف آزادی تحریکوں کا مخالف تھا بلکہ عالمی سطح پر بھی خودمختاری کے لئے لڑنی والی اقوام کی مخالفت کرتا تھا۔

یہ بھی دیکھیں

تحریک انصاف نے مسلم لیگ (ن) کی مزید کئی وکٹیں گرادیں

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب سے مسلم لیگ(ن) کے کئی ارکان اسمبلی نوازشریف کا ساتھ چھوڑ ...