جمعرات , 13 دسمبر 2018

یمن میں محکمہ انسدادِ دہشتگردی کے ہیڈ کوارٹر پر دہشت گردوں کا حملہ، 19 افراد ہلاک

صنعا(مانیٹرنگ ڈیسک) یمن کے ساحلی شہر عدن میں انسدادِ دہشت گردی فورس کے ہیڈ کوارٹر پر داعش کے حملے میں 10 اہلکاروں سمیت 19 افراد ہلاک ہوگئے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یمن کے شہر عدن میں دو کار بم دھماکوں میں 19 افراد ہلاک جب کہ 40 سے زائد زخمی ہوگئے ہیں۔ عدن کے سیکیورٹی حکام نے حملوں کی تصدیق کرتے ہوئے بیان جاری کیا ہے کہ دو کاروں میں موجود 6 مسلح حملہ آوروں نے انسداد دہشت گردی فورس کے ہیڈ کوارٹر پر حملہ کیا۔ سیکورٹی اہلکاروں نے حملہ آوروں کو روکنے کی کوشش کی اور فائرنگ کا تبادلہ بھی ہوا جس میں 4 اہلکار اور گاڑیوں میں موجود 6 مسلح دہشت گرد ہلاک ہوگئے تاہم باقی حملہ آور پولیس اور فوج کا سیکیورٹی حصار توڑ کر مرکزی دروازے تک پہنچنے میں کامیاب ہوگئے۔

حکام کے مطابق حملہ آوروں نے ہیڈ کوارٹر کے مرکزی دروازے پر پہنچتے ہی دھماکا خیز مواد سے بھری 2 گاڑیوں کو اڑا دیا جس کے نتیجے میں مزید 9 افراد ہلاک ہوگئے جن میں 3 فوجی بھی شامل ہیں۔ دھماکے اس قدر شدید تھے کہ کالونی کی متعدد عمارتوں کے شیشے ٹوٹ گئے اور درجنوں گاڑیوں کو بھی شدید نقصان پہنچا۔حملے کی ذمہ داری شدت پسند تنظیم داعش نے قبول کرلی ہے اور بیان جاری کیا ہے کہ یہ دونوں حملے انسدادِ دہشت گردی فورس کے ہیڈ کوارٹر کو تباہ کرنے کے لئے کئے گئے تھے۔

یہ بھی دیکھیں

جنرل اسمبلی میں پاکستانی قرار داد اتفاق رائے سے منظور

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں بین المذاہب ہم آہنگی اور تعاون کو ...