اتوار , 19 اگست 2018

سعودی عرب کو روزانہ 200ملین ڈالر کا نقصان ہورہا ہے:برطانوی اخبار

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) برطانوی اخبار ’’ٹائمز‘‘ نے انکشاف کیا ہے یمن پر سعودی جارحیت میں سعودی عرب کو یمن مزاحمت کے ہاتھوں روزانہ 200ملین ڈالر کا نقصان ہورہا ہے۔اخبار کا مزید کہنا تھا کہ 1 ملین ڈالر سے کم قیمت والے یمن میزائل کو روکنے کے لئے سعودی عرب 3ملین ڈالر کی قیمت پر حاصل ہونے والا’’پیٹریٹ ‘‘ میزائل داغتا ہے۔ اخبار کے مطابق سعودی عرب کا مستقنل اب یمن جنگ جیتنے پر منحصر ہوگیا ہےکیونکہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے اصلاحات کے تمام منصوبے یمن جنگ جیتنے کی بنیادوں پر اعلان کیے گئے ہیں اور جنگ ہارنے کی صورت میں یہ تمام تر منصوبے ناکام ہو جائیں گے۔

اپنی رپورٹ میں ’’ٹائمز‘‘ کا کہنا تھا کہ یمن جنگ جیتنے کے لئے ولی عہد کےلئے لازمی ہے کہ وہ مغربی طاقتوں کو یمن کو تباہ کرنے پر قائل کرے اور اس ضمن میں مغربی ممالک کا تعاون حاصل کرے، اور جرمنی کا سعودی عرب کو ہتھیار فروخت نہ کرنے کا فیصلہ بن سلمان کے لئے بہت نقصان دہ ہے۔

یہ بھی دیکھیں

معاشی بحران ،ترکی کا آئی ایم ایف سے رابطہ نہ کرنیکا اعلان

انقرہ (مانیٹرنگ ڈیسک)ترکی نے معاشی بحران سے نمٹنے کے لیے آئی ایم ایف کے پاس ...