جمعہ , 25 مئی 2018

مردوں میں کینسر کا خطرہ بڑھانے والی عام عادت

پیرس (مانیٹرنگ ڈیسک) روزانہ ایک جگہ بیٹھے رہ کر 4 گھنٹے سے زائد وقت تک ٹیلیویژن مردوں میں آنتوں کے کینسر کا خطرہ بڑھا سکتا ہے۔فرانس کے ایجنسی فار ریسرچ آن کینسر، برطانیہ کے امپرئیل کالج لندن اور آکسفورڈ یونیورسٹی کی مشترکہ تحقیق میں دریافت کیا کہ ٹی وی کے سامنے کم وقت گزارنے والے افراد میں آنتوں کے کینسر کا خطرہ کم ہوتا ہے۔اس تحقیق کے دوران ڈھائی ہزار آنتوں کے کینسر کے شکار افراد کا تجزیہ کیا گیا تاکہ سست طرز زندگی اور اس سرطان کے درمیان تعلق کو تلاش کیا جاسکے۔تحقیق کے دوران دریافت کیا گیا کہ جسمانی سرگرمیاں بڑھانا مردوں میں,

آنتوں کے کینسر کا خطرہ کم کرتا ہے، تاہم محققین کمپیوٹر اسکرین اور اس کینسر کے درمیان کوئی تعلق دریافت نہیں کرسکے۔محققین کا کہنا تھا کہ اس سے پہلے کی تحقیقی رپورٹس میں یہ بات سامنے آچکی ہے کہ ٹی وی دیکھنا دیگر نقصان دہ رویوں جیسے تمباکو نوشی اور زیادہ منہ چلانے کا باعث بنتے ہیں اور یہ عوامل آنتوں کے کینسر کا خطرہ بڑھاتے ہیں۔محققین نے بتایا کہ سست طرز زندگی موٹاپے اور جسم میں چربی بڑھانے کا باعث بھی بنتی ہے، جسم میں اضافی چربی ہارمونز اور دیگر کیمیکلز میں خون کی سطح پر اثرانداز ہوسکتی ہے جس سے خلیات,

کی نشوونما پر اثرات مرتب ہوتے ہیں اور آنتوں کے کینسر کا خطرہ بڑھتا ہے۔آنتوں کا کینسر دنیا بھر میں مردوں کو لاحق ہونے والے کینسر کی چند بڑی اقسام میں سے ایک ہے۔تحقیق کے مطابق زیادہ وقت ٹی وی کے سامنے گزارنے سے کینسر کا خطرہ مردوں میں بڑھتا ہے، خواتین میں نہیں، تاہم اس حوالے سے مزید تحقیق کی ضرورت ہے تاکہ اس کی وجہ معلوم کی جاسکے۔

یہ بھی دیکھیں

ہفتے میں 2 بار اس غذا کا استعمال ہارٹ اٹیک سے بچائے

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)ہفتے میں 2 بار آئلی مچھلی کھانا صحت مند دل کی کنجی ثابت ...