اتوار , 19 اگست 2018

بنوں جیل پر حملے میں فرار ہونے والا قیدی دوبارہ گرفتار

کوہاٹ (مانیٹرنگ ڈیسک)بنوں جیل پر کالعدم تحریک طالبان پاکستان کی جانب سے حملے کے دوران فرار ہونے والے قیدی کو ضلعی پولیس نے دوبارہ گرفتار کرلیا۔خیال رہے کہ 2012 میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان کی جانب سے بنوں جیل پر حملہ کیا گیا تھا، اس دوران سیکڑوں قیدی فرار ہوگئے تھے، جس میں زیادہ تر عسکریت پسند شامل تھے۔اس حوالے سے جاری ایک بیان میں کہا گیا کہ عبداللہ نور جو منشایت اسمگلنگ کیس میں عمر قید کی سزا کاٹ رہا تھا وہ بھی اس حملے میں دیگر افراد کے ساتھ فرار ہوگیا تھا۔

بیان میں بتایا کہ کوہاٹ پولیس نے ملزم کو 2007 میں اس وقت گرفتار کیا تھا جب وہ 40 کلو گرام حشیش اورکزئی ایجنسی سے کراچی اسمگل کر رہا تھا جبکہ اسے اس جرم کے الزام میں عمر قید اور 5 لاکھ جرمانے کی سزا ہوئی تھی۔تاہم وہ جیل پر حملے کے دوران فرار ہوگیا تھا جسے خفیہ اداروں کی معلومات پر دوبارہ گرفتار کیا گیا۔دوسری جانب خیبرپختونخوا پولیس کے سربراہ صلاح الدین محسود کی جانب سے عاصمہ رانی قتل کیس کو قلیل مدت میں حل کرنے پر 7 رکنی پولیس تحقیقاتی ٹیم کے ہر رکن کے لیے 50،

ہزار روپے انعام کا اعلان کردیا۔ذرائع کا کہنا تھا کہ جن پولیس ارکان کو ایوارڈ دیئے جائیں گے ان میں ایس پی انسویسٹی گیشن جہانزیب خان، ڈی ایس پی سٹی رضا خان، ایس ایچ او کے ڈی اے گل جاناں خان، ایس ایچ اور کنٹونمنٹ محمد علی، انچارچ انویسٹی گیشن، انسپکٹر جاوید خان اور ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹرز شامل ہیں۔اس حوالے سے ضلعی پولیس کے ترجمان نے ڈان کو بتایا کہ آئی جی پولیس کی جانب سے ان پولیس افسران کےلیے تعریفی سرٹیفکیٹ کا بھی اعلان کیا گیا

یہ بھی دیکھیں

نگراں وزیراعظم اور کابینہ سبکدوش، نوٹیفیکیشن جاری

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)کابینہ ڈویژن نے نگراں وزیراعظم اور ان کی کابینہ کی سبکدوشی کا نوٹی ...