ہفتہ , 22 ستمبر 2018

امریکہ میں فوجی پریڈ منعقد کرنے پر غور، آخر کیا ضرورت پیش آئی

(تسنیم خیالی)

تاریخی اعتبار سے امریکہ میں فوجی پریڈ منعقد کرنے کی روایت نہیں، مگر اب امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ نے امریکہ کے یوم آزادی (4جولائی) کو فوجی پریڈ کے انعقاد کے لیے احکامات جاری کردیے ہیں، امریکہ میں پریڈ کا انعقاد غیر معمولی بات ہے کیونکہ یہ روایت دراصل سوویت یونین اور روس کی خاصیت ہے اورامریکہ روس یا پھر سوویت یونین کی تمام روایتوں کا سب سے بڑا مخالف ہے۔اب سوال یہ ہے کہ آخر ٹرمپ کو فوجی پریڈ منعقد کرنے کی کیا ضرورت پیش آئی ہے؟ ماہرین کے نزدیک ٹرمپ اس پریڈ کے ذریعے ایک تیر سے متعدد شکار کرنا چاہتے ہیں، سب سے پہلے تو ٹرمپ اس پریڈ کے ذریعے اپنی عوام کو دکھانا چاہتے کہ وہ صرف امریکی قوم کے لیڈر نہیں بلکہ ایک فوجی کمانڈر اور طاقتور فوج کے لیڈر بھی ہیں، اس طرح ٹرمپ امریکی عوام کے دلوں میں اپنی عزت بنانا چاہتے ہیں۔

دوسری بات یہ ہے کہ ٹرمپ پریڈ کے ذریعے جدید امریکی ہتھیاروں کی نمائش کرنا چاہتا ہے،اور دنیا بھر میں امریکی ہتھیاروں کا رعب جمانا چاہتے ہیں اور امریکہ مخالف ممالک کو دھمکی آمیز پیغام پہنچانا چاہتے ہیں۔تیسری اور سب سے اہم بات یہ ہے کہ اس وقت امریکی فوج اپنے ایک بدترین دور سے گزررہی ہے ، سابق امریکی صدر باراک اوباماکے 8سالہ دور اقتدار میں امریکی فوج کو افغانستان اور عراق میں بہترین ناکامی ہوئی جس کی وجہ سے امریکی فوج کی ساکھ بری طرح متاثر ہوئی، کسی دور میں امریکی فوج کانام سنتے ہی دلوں میں خوف آجاتا تھا جدید ترین ہتھیاروں سےلیس اور دنیا کے سب سے بڑے دفاعی بجٹ والی اس فوج نے طاقت کا توازن اپنے طرف جھکا دیا تھا، مگر اب امریکہ کی فوج سے کوئی نہیں ڈرتا بلکہ بعض ممالک تو امریکہ کو خاک میں ملانے کی بھی دھمکی دے چکے ہیں۔

جیسا کہ شمالی کوریا نے کہا۔فوج کی ان ناکامیوں نے امریکی عوام کو بھی مایوس کردیا ہے، امریکی عوام اپنی فوج کی مسلسل جنگوں اور ناکامیوں سے بیزار ہوچکی ہے اور ٹرمپ کی کوشش ہے امریکی عوام کی بے زاری کو کسی طرح دور کیا جائے۔امریکی دفاعی بجٹ بھی امریکہ میں فوجی پریڈ منعقد کرنے کی ایک وجہ ہے، امریکہ کادفاعی بجٹ 600ارب ڈالر جیسی خطیر رقم سے بھی تجاوز کرچکا اور سبھی امریکیوں کے ذہنوں میں ایک سوال ہے اوروہ یہ کہ آخر اتنا بڑا دفاعی بجٹ کیوں رکھاجاتا ہےاور یہ رقم کیسے خرچ ہوتی ہے؟اس سوال کا جواب دینا بھی ٹرمپ کے لیے ضروری ہوگیا جس کے لئے ٹرمپ کے نزدیک فوجی پریڈ کا انعقاد کافی ہے؟فوجی پریڈ کا انعقاد امریکی فوج کی ساکھ بحال کرنے کیلئے کافی نہیں کیونکہ اپنی طاقت کی نمائش کرنا اور عملی میدان میں طاقت کے استعمال،

اوراس طاقت سے استفادہ کرنا دو مختلف چیزیں ہیں۔فوجی پریڈ میں وہی ہتھیار دکھائے جائیں گے جواس وقت عملی طور پر امریکی فوج کے پاس موجود ہیں یہ وہی ہتھیار ہیں جو امریکی ا فواج افغانستان، عراق اور دیگر ممالک میں استعمال کرتی آرہی ہیں، اس طاقت اور جدید ہتھیاروں کے باوجود شکست زدہ ہونا فوج کی نااہلی ہے، ٹرمپ کی شخصیت کا جائزہ لگانے والےماہرین کے مطابق ٹرمپ ’’شوبازی‘‘ کرنے کا شوق رکھتے ہیں اور خود کو سب کے سامنے نمایاںرکھنے کو ترجیح دیتے ہیں، اس بناء پر یہ کہنا بے جانہیں ہوگا کہ ٹرمپ اس پریڈ کے ذریعے ’’شوبازی‘‘ کرتے ہوئے خود کو ایک طاقتور صدر کے طور پر پیش کرنا چاہتے ہیں۔البتہ بعض ماہرین کا کہنا ہے کہ ٹرمپ فوجی پریڈ سے،

رواں سال نومبر میں امریکی کانگرس کے منعقد ہونے والے ’’نصف المدتی‘‘ انتخابات میں استفادہ کرنا چاہتے ہیں جہاں انکی دوسالہ کارکردگی کا جائزہ لیا جائے گا اور انہیں باقی کی صدارتی مدت پوری کرنے کے لیے ووٹوں کی ضرورت درپیش ہوگی۔

یہ بھی دیکھیں

آپ کیا جانیں کربلا کیا ہے

(تحریر: نذر حافی) نبوت ختم ہوگئی، حضرت محمد رسول اللہ صلی اللہ علیہ و آلہ ...