جمعہ , 14 دسمبر 2018

بن سلمان کے خلاف یمن میں جنگی جرائم کا ارتکاب کرنے کی بنا پر عدالت میں شکایت

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک)سعودی عرب کے ولیعہد بن سلمان کے دورہ فرانس کے موقع پر یمن سے متعلق انسانی حقوق کے کارکنوں کے ایک گروپ نے یمن میں جنگی جرائم کا ارتکاب کرنے کی بنا پر بن سلمان کے خلاف عدالت میں شکایت کی ہے۔ سعودی ولیعہد محمد بن سلمان کے دورہ فرانس کے موقع پر ہی پیرس میں انسانی حقوق کے ایک گروپ نے ان پر جنگی جرائم کا ارتکاب کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے ایک عدالت میں شکایت کی ہے اور کہا ہے کہ یمن میں ان کے اقدامات انسانیت سوز ہیں-

انسانی حقوق کے اس گروپ نے اپنی شکایت میں کہا ہے کہ محمد بن سلمان ہی یمن میں عام شہریوں کے قتل عام کے ذمہ دار ہیں- یمن سے متعلق انسانی حقوق کے گروپ کے ارکان جوزف برہام اور حکیم شرقی نے رویٹرز نیوز ایجنسی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سعودی ولیعہد ہی وہ پہلے شخص ہیں جنھوں نے چھبیس مارچ دو ہزار پندرہ کو یمن پر بمباری کا حکم دیا تھا-

ان دونوں وکلا کا کہنا تھا کہ سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں کی اندھادھند بمباری سے یمن میں عام شہریوں کی زندگیاں خطرے میں پڑ گئی ہیں اور بن سلمان کے اس اقدام کو انسانیت کے خلاف جرم قرار دیا جا سکتا ہے-

بن سلمان کے خلاف فرانس کی عدالت میں دائر کی گئی درخواست میں کہا گیا ہے کہ یمن پر سعودی عرب کے وحشیانہ حملوں اور یمن کے محاصرے سے دسیوں لاکھ یمنی شہری بنیادی ضرورت کی اشیا سے بھی محروم ہو گئے ہیں اور یمن پر مسلط کی گئی جنگ نے اس ملک کو قحط اور بھوک مری سے دوچار کر دیا ہے-خبروں میں کہا گیا ہے کہ فرانس کے عدالتی حکام بھی اس درخواست پر سماعت کرنے والے ہیں اور ضرورت پڑنے پر قانونی کارروائی بھی کریں گے۔

یہ بھی دیکھیں

آئندہ انتخابات سے قبل مستعفی ہو جاؤں گی، برطانوی وزیر اعظم

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک)برطانوی وزیر اعظم تھریسا مے نے اپنی جماعت کنزرویٹو پارٹی میں بریگزٹ کے ...