منگل , 24 اپریل 2018

نہتے یمنی مسلمانوں پر سعودی اتحادی افواج کے حملے جاری، متعدد شہید

صنعاء (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی اتحادی افواج کے جنگی طیاروں نے کل رات صوبہ حجہ کے علاقے العطن میں ایک گھر پر حملہ کیا جس کے نتیجے میں ایک یمنی بچہ شہید اور اس کی والدہ اور بہن زخمی ہو گئیں۔رپورٹ کے مطابق یمن کے صوبہ حجہ کے علاقے الابطح میں سعودی فوج نے ایک گاڑی کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں گاڑی میں سوارشوہر اوربیوی شہید ہو گئے۔ جبکہ 2 یمنی شہری سعودی عرب کی سرحدی سکیورٹی فورسز کی فائرنگ سے شہید ہو گئے۔

انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والی عالمی تنظیم ہیومن رائٹس واچ کی جانب سے کہا گیا ہے کہ سعودی عرب یمن میں فضائی حملے کے دوران کلسٹر بموں کا استعمال کر رہا ہے۔یاد رہے کہ سعودی عرب نے اس سے قبل بھی کئی مرتبہ نہتے یمنی مسلمانوں پر بے دریغ ممنوعہ ہتھیاروں کا استعمال کیا ہے۔کلسٹر بموں میں شامل دھماکہ خیز مواد کے حامل اجزا، ایک بڑے علاقے میں پھیل جاتے ہیں اور اکثر اوقات وہ پھٹ نہیں پاتے جو پھر بعد میں بارودی سرنگ میں تبدیل ہو جاتے ہیں جو سرانجام جنگ کے بعد بھی عام شہریوں کے لئے جان لیوا ثابت ہوتے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

سعودی عرب کا یمن پر ایک اور وحشیانہ حملہ / 18 افراد شہید

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک)یمن کے صوبہ حجہ میں شادی کی ایک تقریب پر سعودی عرب کے ...