منگل , 11 دسمبر 2018

معائنہ کاروں کو دوما آنے کی اجازت دی جائے گی، روس

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) روس نے کہا ہے کہ کیمیائی ہتھیاروں کی روک تھام کی تنظیم او پی ڈبلیو سی کے معائنہ کاروں شامی شہر دوما میں مبینہ کیمیائی حملے کے مقام پر جانے کی اجازت دی جائے گی۔دوسری جانب روس نے مغربی ممالک کے ان الزامات کی تردید کی ہے کہ وہ اس مقام پر شواہد میں ردوبدل کر رہا ہے جہاں پر مبینہ کیمیائی حملہ ہوا تھا۔

واضح رہے کہ امریکہ، برطانیہ اور فرانس نے روس پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ حقائق پر پردہ ڈالنے اور بین الاقوامی ماہرین کو دوما میں حملے کے مقام پر جانے سے روکنے کی کوشش کر رہا ہے۔

کیمیائی ہتھیاروں کی روک تھام کی خود مختار تنظیم او پی ڈبلیو سی کا کہنا ہے کہ شامی حکومت نے اس سےقبل سیکیورٹی وجوہات کی بنا پر اسے کیمیائی حملے کے مقام پر رسائی دینے سے انکار کیا تھا۔

جبکہ گزشتہ روز روسی فوج نے اعلان کیا کہ بدھ کو بین الاقوامی معائنہ کاروں کو مبینہ کیمیائی حملے کے مقام پر جانے کی اجازت ہو گی۔او پی ڈبلیو سی کی 9 رکنی ٹیم پہلے سے ہی شامی دارالحکومت دمشق کے قریب اجازت ملنے کا انتظار کر رہی ہے۔

روس کے وزیر خارجہ سرگئی لاریوف نے شام میں مشتبہ کیمیائی حملے کے مقام پر شواہد سے چھیڑ چھاڑ کرنے کی تردید کی ہے۔خیال رہے کہ 7 اپریل کو ہونے والے کیمیائی حملے کے وقت دوما باغیوں کا مضبوط گڑھ تھا تاہم اب روسی اور شامی سیکیورٹی نے آپریشن کے بعد اس علاقے پر دوبارہ کنٹرول حاصل کر لیا ہے۔شام میں امدادی کارکنوں اور طبی اہلکاروں کے مطابق سات اپریل کو دوما میں ہونے والے کیمیائی حملے میں 40 سے زیادہ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

82 سال پرانا ریکارڈ یاسرشاہ کی جھولی میں گرنے کو تیار

دبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) 82 سال پرانا اہم ترین ٹیسٹ ریکارڈ بھی یاسر شاہ کی جھولی میں ...