بدھ , 15 اگست 2018

برطانیہ میں مقیم تارکین وطن کو شہریت دی جائے، بورس جانسن کا مطالبہ

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں تارکین وطن کو شہریت دینے کا مطالبہ زور پکڑتا جارہا ہے، سیکریٹری خارجہ بورس جانسن نے برطانوی پارلیمنٹ سے مطالبہ کیا ہے کہ گذشتہ دس برس سے غیر قانونی طور پر مقیم افراد کو شہریت دی جائے۔تفصیلات کے مطابق برطانیہ کے سیکریٹری خارجہ بورس جانسن نے برطانوی پارلیمنٹ سے مطالبہ کیا ہے کہ ملک میں مقیم غیر قانونی افراد کو شہریت دی جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ جو افراد برطانیہ میں گذشتہ دس سالوں سے غیر قانونی طور پر مقیم ہیں انہیں شہریت دی جائے، بالخصوص دولت مشترکہ کے رکن ممالک کو لازمی شہریوں کے حقوق دیئے جائیں۔

برطانیہ کے سیکریٹری برائے امور خارجہ جارس بونسن لندن کے میئر بھی رہ چکے ہیں، اور موجودہ حکمران پارٹی کے اہم رکن بھی سمجھے جاتے ہیں۔برطانیہ میں غیر قانونی افراد کو شہریت دینے کا مطالبہ تارکین وطن کو ملک بدر کرنے کے اسکینڈل ونڈرش کے سامنے آنے کے بعد سے زور پکڑتا جارہا ہے۔

بورس جانسن کا کہنا تھا کہ جن تارکین وطن کا ماضی شفاف ہے، برطانیہ میں غیر قانونی طور پر بسنے والے وہ افراد جو جرائم سے پاک ہوں انہیں فوری طور پر برطانیہ کی شہریت دی جائے۔واضح رہے کہ برطانوی پارلیمنٹ کے اراکین نے سیکریٹری خارجہ بورس جانسن کے اس منصوبے کو منسوخ کرتے ہوئے متنازعے قرار دیا ہے۔

بورس جانسن کے ببہترین دوست اور حامی ندہیم زاہاوی نے بھی اپنے دوست کی مخالفت میں ووٹ دیتے ہوئے کہا کہ ’سیکریٹری خارجہ کا متنازعے منصوبہ غلط اور غیر منصفانہ ہے‘۔

یہ بھی دیکھیں

پاکستان نے پہلے ملکی ریموٹ سینسنگ سیٹلائٹ کا کنٹرول سنبھال لیا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) اس سال جون میں چین کی سرزمین سے بھیجے جانے والے پاکستان ...