جمعرات , 21 جنوری 2021

ترکی نے مزید324 افغان تارکین وطن ملک بدر کر دیے

انقرہ (مانیٹرنگ ڈیسک) ترکی حکام نے مزید324 افغان تارکین وطن ملک بدر کردیا ہے۔واضح رہے کہ کچھ عرصہ قبل ترک حکام نے 6 ہزار 800 افغان تارکین وطن کو جبری طور پر ملک بدر کرنے کا اعلان کیا تھا۔ترک وزارت داخلہ کے مطابق ان افغان مہاجرین کو متعلقہ صوبائی حکام کے حوالے کر دیا گیا ہے۔افغان وزارت امور پناہ گزین کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ترک حکام نے افغان حکومت کو اعتماد میں لئے بغیر ہزاروں افغان تارکین وطن کو جبری طور پر ملک بدر کردیاہے۔

انہوں نے ترک حکام پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا افغانستان میں پہلے سے ہی لاکھوں شہری بے گھر ہیں ایسی حالت میں افغانوں کو ملک بدر کرنا درست نہیں ہے۔ان کے مطابق افغانستان میں سلامتی کی صورتحال نازک ہے، اس لیے افغان مہاجرین کو ملک بدر نہیں کیا جانا چاہیے۔

واضح رہے کہ ترک حکام کا کہنا ہے کہ ملکی سلامتی کی خاطر افغان تارکین وطن کا انخلا نا گزیر ہوچکا ہے۔افغانستان کی وزارت براے مہاجرین کے ترجمان کا کہنا ہے کہ گزشتہ سال یورپ سے 10ہزار افغان تارکین وطن کو ملک بدر کردیا گیا۔یاد رہے کہ پاکستان میں لاکھوں افغان تارکین وطن آباد ہیں اور پاکستانی حکام افغان حکومت سے مہاجرین کی باعزت واپسی میں تعاون کے خواہاں ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

آیت اللہ العظمی بشیر نجفی کی حرم مطہر امام رضا(ع) پر امریکہ کی جانب سے پابندی عائد کیے جانے کی شدید مذمت

مرجع تقلید جہاں تشیع آیت اللہ العظمی بشیر نجفی نے حرم مطہر حضرت امام رضا …