جمعرات , 24 اکتوبر 2019

غرب اردن، بیت المقدس میں گوریلا کارروائیوں میں متعدد صہیونی فوجی زخمی

36

فلسطین کے مقبوضہ بیت المقدس اور مغربے کنارے کے جنوبی شہر الخلیل میں اتوار کے روز فلسطینی مزاحمتی کارکنوں کی کارروائیوں میں متعدد یہودی آبادکار اور فوجی شدید زخمی ہوگئے۔

مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق الخلیل شہر میں ایک فلسطینی نشانہ باز نے گھات لگا کر اسرائیلی فوجیوں کی گشتی پارٹی پر فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں ایک فوجی زخمی ہوا ہے۔

قبل ازیں اسی علاقے میں اسی طرح کی ایک دوسری کارروائی میں اسرائیلی فوج میں شامل ایک خاتون اہلکار زخمی ہوگئی تھی۔

عبرانی اخبار’’یدیعوت احرنوت‘‘ نے اپنی ویب سائیٹ پر پوسٹ کردہ ایک خبر میں بتایا ہے کہ الخلیل شہر میں سدہ الفخص کے مقام پر ایک مشتبہ فلسطینی نوجوان نے فارئرنگ کرکے فوجی اہلکار کو زخمی کردیا۔ رپورٹ کے مطابق واقعے کے فوری بعد اسرائیلی فوج اور پولیس نے علاقے کوگھیرے میں لے کر حملہ آور کی تلاش شروع کردی تھی تاہم کسی شخص کی گرفتاری عمل میں نہیں لائی جاسکی۔ زخمی یہودی فوجی کو اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

قبل ازیں مسجد ابراہیمی کے قریب فائرنگ ہی کے ایک واقعے میں اسرائیلی فوج کی ایک خاتون اہلکار کو زخمی کردیا گیا تھا۔ اس کارروائی کا حملہ آور بھی بہ حفاظت فرار ہوگیا تھا۔

عبرانی ذرائع ابلاغ کے مطابق مسجد ابراہیمی کے قریب فائرنگ سے زخمی کی گئی اسرائیلی خاتون فوجی اہلکار کی عمری 20 سال ہے۔ اسے درمیانے درجے کے زخم آئے ہیں جسے علاج کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔ پولیس نے بڑے پیمانے پر علاقے میں سرچ آپریشن شروع کیا ہے تاہم حملہ آور کی گرفتاری عمل میں نہیں لائی جاسکی۔

 بیت المقدس میں کارروائی

درایں اثناء بیت المقدس میں اتوار کی شام ایک فلسطینی نوجوان نے چاقو کے حملے میں ایک یہودی آباد کار کو شدید زخمی کردیا۔

مقامی ذرائع کے مطابق ایک مشتبہ فلسطینی حملہ اور نے ’’ارمون ھنٹزو‘‘ کالونی کے قریب ایک فلسطینی نوجوان نے ایک یہودی آباد کارکی پیٹھ میں چاقو گھونپ دیا جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہوگیا۔ فوجیوں نے حملہ آور کو نشانہ بنانے کے لیے اس پر فائرنگ کی تاہم وہ صور باھر کالونی کی طرف بہ حفاظت فرار ہوگیا۔

یہ بھی دیکھیں

لبنان میں گذشتہ سات دنوں سے مظاہروں کا سلسلہ جاری

بیروت: لبنان میں گذشتہ سات دنوں سے احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے اور مظاہرین …