ہفتہ , 18 اگست 2018

علی صدیقی 29 مئی سے امریکا میں پاکستانی سفیر کی ذمہ داریاں سنبھالیں گے

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) مسلم لیگ (ن) کی حکومت ختم ہونے سے محض 2 روز قبل علی جہانگیر صدیقی امریکا میں پاکستانی سفیر کی حیثیت سے 29 مئی کو اپنی ذمہ داریاں سنبھالیں گے۔واشنگٹن میں رخصت ہونے والے پاکستانی سفیر اعزاز احمد چوہدری سے قلمدان لینے کے بعد علی جہانگیر صدیقی امریکی اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ میں اپنے دستاویزات جمع کرائیں گے۔واضح رہے کہ اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ نے پہلے ہی علی جہانگیر صدیقی کی امریکا میں بطور پاکستانی سفیر تصدیق کردی ہے۔اس حوالے سے بتایا گیا کہ،

معروف بزنس مین جہانگیر صدیقی کے صاحبزادے علی جہانگیر صدیقی اپنی ذمہ داریاں سنبھال لیں گے لیکن وہ اس وقت تک اہم عہدوں پر فائز افسران کا اجلاس طلب نہیں کر سکتے جب تک امریکی صدر ان کے اسناد پر دستخط نہ کریں اور اس عمل کی تکمیل میں کئی مہینے درکار ہوتے ہیں۔تاہم کہا جارہا ہے کہ علی جہانگیر صدیقی کے امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے داماد جیرڈ کشنر سے دوستانہ تعلقات ہیں اور وہ وائٹ ہاؤس میں ڈونلڈ ٹرمپ کے مشیر برائے مشروق وسطیٰ بھی ہیں۔واشنگٹن میں سفارتی ذرائع نے بتایا ،

کہ عبوری حکومت کے دوران علی جہانگیر صدیقی بطور سفارتکار کام کر سکتے ہیں لیکن نئی حکومت انہیں واپس بھی بلا سکتی ہے۔یاد رہے کہ علی جہانگیر صدیقی اگست 2017 سے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے معاون خصوصی مقرر تھے تاہم اس وقت سے اب تک انہیں کوئی قلمدان نہیں دیا گیا تھا۔اس سے قبل علی جہانگیر صدیقی ایئربلیو کے ڈائریکٹر بھی رہے جو شاہد خاقان عباسی کے خاندان کی کمپنیوں میں سے ایک ہے۔جے ایس بینک لمیٹڈ اور جے ایس پرائیویٹ اِکویٹی منیجمنٹ کے چیئرمین علی،

جے صدیقی معروف کاروباری شخصیت جہانگیر صدیقی کے بیٹے ہیں جبکہ 2016 کے پاناما پیپرز میں علی جے صدیقی کا نام بھی شامل تھا۔یاد رہے کہ اعزاز احمد چوہدری کو گزشتہ برس 15 فروری کو امریکا میں پاکستان کا سفیر مقرر کیا گیا تھا۔اعزاز چوہدری دسمبر 2013 سے سیکریٹری خارجہ کے عہدے پر تعینات تھے، جنہیں بعد میں امریکی سفیر تعینات کردیا گیا تھا جبکہ ان کے عہدہ چھوڑنے کے بعد تہمینہ جنجوعہ کو سیکریٹری خارجہ مقرر کیا گیا تھا۔

یہ بھی دیکھیں

جرمنی سے 46 افغان شہری بے دخل

برلن (مانیٹرنگ ڈیسک) جرمنی میں سیاسی پناہ کی درخواستیں نامنظور ہونے کے بعد جرمنی نے ...