اتوار , 18 اگست 2019
تازہ ترین

جنوبی چینی سمندروں میں امریکی مداخلت برداشت نہیں، چینی سفیر

1d1aca38-d5db-4c14-a2b3-81ae98f64bf9_16x9_600x338

واشنگٹن (نامہ نگار)امریکہ میں تعینات چینی سفیر سوئی ٹیان کائی نے کہا ہے کہ اگر امریکہ نے جنوبی چینی سمندروں میں اپنے جنگی جہاز بھیجنے کی پالیسی ترک نہ کی تو اس سے خطے پر جنگی اثرات مرتب ہو ں گے ، امریکہ کا دعویٰ ہے کہ وہ جنوبی چینی سمندروں میں فوجی طاقت میں اضافہ نہیں کررہا لیکن یہ امریکہ ہی ہے جو جنگی بحری اور ہوائی جہاز علاقے میں بھیج کر ایسی صورتحال پیدا کررہا ہے اور اگر ان کارروائیوں کو نہیں روکا گیا تو خطے میں جنگی صورتحال پیدا ہو جائیگی ، امریکہ کی جانب سے جہاز رانی کی آزادی کے نام پر کئے جانیوالے آپریشن دراصل جہاز رانی کی آزادی کے خلاف کئے جارہے ہیں جو کہ اقوام متحدہ کے سمندری قانون کے بارے میں کنونشن کی بھی خلاف ورزی ہے کیونکہ امریکہ کو یقین ہے کہ اقوام متحدہ کا کنونشن امریکی بحریہ کی دنیا بھر میں نقل و حرکت کی آزادی پر پابندی عائد کرتا ہے ۔ان خیالات کا اظہار امریکہ میں تعینات چینی سفیر سوئی ٹیان کائی نے کیا ۔ انہوں نے جنوبی چینی سمندروں کی صورتحال پر تشویش کا اظہار کیا ، خاص طورپر امریکی بیانات اور اس کی کارروائیوں کو علاقے میں کشیدگی بڑھانے کا سبب قرار دیا ۔انہوں نے کہا کہ امریکی بیانات اور کارروائیوں سے بعض کھلاڑیوں کو جارحانہ کارروائیوں کی شہہ مل سکتی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

کشمیر میں بھارتی جارحیت کی وجہ سے عوام کی زندگی اجیرن ہوگئی: ایمنسٹی انٹرنیشنل

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک)ایمنسٹی انٹرنیشنل نے ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر کی صورتحال پر شدید تشویش …