بدھ , 26 ستمبر 2018

امریکہ تیرا شکریہ !

(تسنیم خیالی)

امریکہ کاہزار بار شکریہ کہ اس نے بالآخر اقوام متحدہ کی کمیٹی برائے انسانی حقوق سے دستبردار ہونے کا فیصلہ کرلیا کیونکہ بنیادی طور پر وہ اس کمیٹی کا حصہ بننے کا اہل ہی نہیں کیونکہ امریکہ دنیا کا وہ ملک ہے جو سب سے زیادہ انسانی حقوق کی خلاف ورزی اور پامالی کرتا ہے نیز امریکہ ان ممالک کی حمایت کرتا ہے جو جنگی جرائم کا ارتکاب کرتے ہیں جن میں سرفہرست اسرائیل اور سعودی عرب ہیں، دستبرداری کا یہ فیصلہ اسرائیل کو خوش کرنے کیلئے کیا گیا ،علاوہ ازین اس فیصلے سے اسرائیل کو واضح پیغام دیا گیا ہے کہ وہ فلسطین اور لبنان میں لوگوں کا قتل عام اور خون ریزی جاری رکھے،

بچوں کو اپنے پناہ گزین والدین سے جدا کرکے انہیں کیمپوں میں ٹھوسنے، مسلمانوں کے خلاف بدترین تفرقہ بازی کرنے اور انہیں امریکی سرزمین میں داخل ہونے سے روکنے، جاپانی شہریوں کا ایٹم بم سے صفایا کرنے، دہشت گرد تنظیموں کو معرض وجود میں لانے اور قتل وغارت گری کیلئے دیگر ممالک کو ہتھیار فروخت کرنے والے امریکہ کو قطعی طور پر انسانی حقوق کی کمیٹی تو کیا اقوام متحدہ کا بھی حصہ نہیں ہونا چاہیے، امریکی نمائندہ برائے اقوام متحدہ اور دنیا کی بدتہذیب ترین خاتون نیکی ہیلی نے کمیٹی سے امریکہ کی دستبرداری کا اعلان کرتے ہوئے کمیٹی کو منافق اور جانب دار قراردیا البتہ شاید ہیلی کو یہ معلوم نہیں کہ منافق انسانیت کی حمایت نہیں کرتا اور جانب دار صاحب حق اور مظلوم کے حق میں ہونا چاہیے، دیکھا جائے تودہائیوں سے امریکہ ،

اسرائیل کی حمایت کرکےمنافقت کرتا آرہا ہے اور دیکھا جائے تو امریکہ شروع سے ہی اسرائیل کا جانب دار رہا اور آج وہ اقوام متحدہ کی کمیٹی برائے انسانی حقوق پر الزام تراشیاں کررہا ہے، ٹرمپ انتظامیہ کو صرف اسرائیل کا دفاع اور اس کی حمایت کی فکر ہے اور اس غرض کیلئے امریکہ اپنا سب کچھ اور تمام وسائل بروئے کا ر لارہا ہے، امریکہ کی دستبرداری کی وجہ یہ تھی کہ اقوام متحدہ کی کمیٹی برائے انسانی حقوق نے اسرائیل غزہ کی پٹی کے علاقے میں حال ہی میں فلسطینیوں کے قتل عام کی تفتیش کےلیے کمیٹی قائم کرنے کی منظوری دی تھی،

اس قتل عام میں بچے، نوجوان حتیٰ کہ معذور افراد اور نہتے فلسطینی اسرائیلی گولیوں کا نشانہ بن کر شہید ہوئے، اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کی کمیٹی سے امریکہ کی دستبرداری پر کوئی دکھ نہیں کیونکہ اس کمیٹی میں امریکہ کی موجودگی خود کمیٹی پر بدنما داغ تھی، امریکہ کو اسرائیل اس کی خون ریزی اورحیوانیت مبارک ہو۔

یہ بھی دیکھیں

قومی سلامتی کے دشمن صحافی اور سیاستدان بچ نہ پائیں

(سید مجاہد علی) لاہور ہائی کورٹ نے ڈان اخبار کے رپورٹراور کالم نگار سیرل المیڈا ...