پیر , 10 دسمبر 2018

یمنی فوج کو ایران نے ہتھیار فراہم کئے ہیں، عرب امارات کا دعویٰ

ابو ظہبی (مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ عرب امارات نے یمن کی بندرگاہ الحدیدہ میں شکست کھانے کے بعد ابوظبی میں ایک نمائش لگا کر دعوی کیا ہے کہ یمنی فوج کو ایران نے ہتھیار فراہم کئے ہیں۔

متحدہ عرب امارات نے کہ جس نے سعودی اتحاد کے دائرے میں یمن کی اسٹریٹیجک بندرگاہ الحدیدہ پر قبضہ کرنے کے لئے دس دن قبل وسیع حملوں کا آغاز کیا تھا جنگ کے میدان میں ملے بعض ہتھیاروں کی ابوظہبی میں نمائش لگا کر دعوی کیا ہے کہ یمنی فوج اور عوامی رضاکارفورس کو یہ ہتھیار ایران نے دیئے ہیں-

یہ ایسی حالت میں ہے کہ سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں نے پچھلے تین برسوں سے یمن کا چاروں طرف سے محاصرہ کر رکھا ہے یہاں تک کہ محاصرے کی وجہ سے محصور یمنی عوام کو غذائی اشیا اور دوائیں بھی نہیں پہنچ پا رہی ہیں-

قبل ازیں سعودی عرب نے بھی ایک میزائل کا ٹکڑا دکھا کر کہ جس پر ایران کی غذائی مصنوعات کے آرم بنے ہوئے تھے، ایسا ہی دعوی کیا تھا کہ ایران یمنی فوج کو ہتھیار اور میزائل فراہم کر رہا ہے-

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے سعودیوں کی مضحکہ خیز جعل سازی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، اسٹینڈرڈ کی علامت میزائلوں پر نہیں بلکہ صرف اشیائے خوراک اور غذائی مصنوعات پر لگاتا ہے-

مبصرین کا کہنا ہے کہ ہتھیاروں کی نمائش لگا کر ایران کے خلاف جھوٹے دعوے کرنے کا متحدہ عرب امارات کا مقصد، پچھلے دس روز سے الحدیدہ میں مل رہی شکست پر پردہ ڈالنا ہے-

یہ بھی دیکھیں

امریکہ و اسرائیل سے وفا کی اُمید عرب آمروں کی حماقت ثابت ہوگی:تحریک مقاومت حماس کے رہنماء

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)فلسطین کی اسلامی مقاومتی تحریک حماس کے رہنماء نے کہا ہے ...