پیر , 16 جولائی 2018

خطّے میں پائیدار امن و استحکام کا دروازہ شام سے ہو کر گذرتا ہے

دمشق (مانیٹرنگ ڈیسک) شام کے ایک سینئر رکن پارلیمنٹ ’’بوترس مرجانا‘‘ نے غیر ملکی حمایت یافتہ دہشتگردوں کے خلاف شامی فوج اور اسکے اتحادیوں کی کامیاب مہم کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ علاقے میں پائیدار امن و استحکام کا دروازہ شام سے ہو کر گذرتا ہے۔

انہوں نے کہاکہ امریکہ ، فرانس ، برطانیہ اور اسکے علاقائی اتحادی منجملہ سعودی عرب ، قطر ، ترکی نے شام میں دہشتگردوں کے ذریعے حکومت دمشق کو گرانے کی ناکام کوشش کی۔ انہوں نے کہا کہ شام میں دنیا بھر کے دہشتگردوں کو جمع کر کے اور انہیں تربیت دے کر ان ممالک نے اقوام متحدہ کی قرارداد 2625 کی کھلی خلاف ورزی کی ہے۔

انہوں نے علاقے میں دہشتگردی کے خلاف جنگ میں دمشق حکومت کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ بعض علاقائی رجعتی حکومتوں کی توسیع پسندانہ پالیسی علاقائی امن و استحکام کیلئے بڑا خطرہ ہے۔

واضح رہے کہ شام کو سن 2011ء سے امریکہ، سعودی عرب ، ترکی اور قطر کے حمایت یافتہ دہشتگرد گروہوں کی سرگرمیوں کا سامنا ہے جس کے نتیجے میں چار لاکھ ستر ہزار سے زائد شامی شہری مارے جا چکے ہیں اور دہشتگردی کے نتیجے میں کئی لاکھ افراد اپنے ملک میں بے گھر اور لاکھوں دیگر ممالک میں پناہ لینے پر مجبور ہو گئے ہیں۔

بحوالہ نیوز نور

یہ بھی دیکھیں

جھاڑکھنڈ: ایک ہی خاندان کے 6 افراد نے خود کشی کرلی

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک)بھارتی ریاست جھاڑکھنڈ کے علاقے ہزاری باغ میں ایک ہی خاندان کے ...